مباہلے والی بی بی کی قبر کی توہین کیخلاف عیسائیت کے مرکز میں زبردست احتجاج ، شہر شہر تعمیر جنت البقیع کے نعروں کی گونج

ولایت نیوز شیئر کریں

اٹلی کے پانچ شہروں میں یوم انہدام جنت البقیع کے موقع پر زبردست ماتمی احتجاج

روم (ولایت نیوز مانیٹرنگ ڈیسک ) اٹلی کے شہر شہر میں جنت البقیع کی تعمیر نو آواز گونج اٹھی ۔ عالمی البقیع موومنٹ کے زیر اہتمام اٹلی کے پانچ شہروں میں انہدام جنت البقیع کے خلاف زبردست احتجاج کیا گیا۔

اٹلی : ایک معصوم بچی نبی کریم ؐ کی بیٹی کی قبر کی مسماری کا خاموش ماتم کرتے ہوئے

اٹلی کےدارلحکومت روم میں شہر کے مرکز ( سٹی سینٹر ) میں مجلس بقیع اور بعد ازاں ماتمی احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اس موقع پر ماتمی تنظیم باب الحوائج نے ماتم داری کی۔

روم کے احتجاج کے کوآرڈینیٹر شارق رضا بخاری تھے جنہوں نے احتجاج کے اختتام پر تمام شرکاء اور انتظامیہ کا معاونت پر شکریہ ادا کیا ۔

نووارا سٹی سینٹر:

ایک احتجاج پروگرام نووارا کے سٹی سینٹر میں کرونا وائرس کے باعث احتیاطی تدابیر کے تحت احتجاج کیا گیا جس سے اسرار نقوی ، تاشف نقوی اور منہاج القرآن انٹرنیشنل کی جانب سے اہلسنت رہنماؤں نے بھی خطاب کیا ۔

تاشف نقوی نے اس عہد کا اظہار کیا کہ قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کی کال پر اس احتجاج کو مقدس مزارات کی عظمت کی بحالی تک جاری رکھا جائے گا۔

بلونیا سٹی سینٹر:

بلونیا کے سٹی سینٹر میں ماتمی احتجاج کیا گیا اس احتجاج کی اجازت خادم ماتمیان کاشف رضا مولائی نے لی تھی ۔ احتجاجی پروگرام سے سید مرتضی کاظمی، چوہدری اختر عباس گجر ، ملک محسن حیدرنے خطاب کیا ۔

ماتمی تنظیم صدا حسین بخاری نے پرسہ پیش کیا۔

کارپی امام علی ؑ سنٹر:

کارپی کے امام علی سینٹر میں مجلس عزا اور احتجاجی ماتمی مظاہرہ کیا گیا جس سے زاکر میاں قمر عباس ، ذاکر سید وسیم کاظمی، ذاکر منور حسین شاکر نے خطاب کیا ، پروگرام کے منتظم چوہدری اختر عباس گجر تھے ۔

وریزے :

اٹلی کے شہر وریزے میں جنت البقیع کی مسماری پر ماتمی احتجاج کیا گیا ۔

مظاہرے کی قیادت ٹی این ایف جے اٹلی کے صدر جرار حیدر، سید محمد علی، نسیم صابر گھمن، سید شہزاد علی، امیر علی و دیگر سماجی رہنمائوں نے کی۔ مظاہرے میں اٹلی میں مقیم پاکستانیوں کے علاؤہ مختلف مکاتب فکر کے لوگوں نے شرکت کی اور حکومت سعودی عرب کی جانب سے آٹھ شوال1926کے بزرگان دین کے مزارات بلڈوز کرنے کے شرمناک اقدام کی پرزور مذمت کی گئی۔اس موقع پر احتجاجی مظاہرین نے مزارات کے انہدام کے خلاف زبردست نعرہ بازی کی۔

مختار جنریشن کے سید علی مراد نے قرارداد پیش کی جس میں عالمی اداروں سے مطالبہ کیا کہ وہ حکومت سعودی عرب پر مزارات مقدسہ کی عزت رفتہ کی بحالی کیلئے دبائو ڈالیں۔

مقررین نے قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کو اسلامی آثار کی خستہ حالی کیخلاف آواز بلند کرنے اور انکی بحالی کیلئے بھرپور جدوجہد کرنے پر سپاس تحسین پیش کیا۔ ماتمی دستہ گدائے در بتول نے نوحہ خوانی و پرسہ داری کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.