مدنی ریاست کاچرچاکرنے والے اپنی ذات کوقصاص کیلئے پیش کریں ،حکمران اور جج فرامین علیؑ یا درکھیں، آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

ریاست مدینہ کے قیام کاچرچاکرنے والے کردارختمی مرتبت ؐکی پیروی میں اپنی ذات کوقصاص کیلئے پیش کریں۔حامدموسوی

حکم خداوندی ہے کہ ایمان والوانصاف کے علمبردار،خداواسطے کے گواہ بنواگرچہ تمہارے انصاف ،گواہی کی زد میں تمہاری اپنی ذات ، والدین اوررشتہ دارہی کیوں نہ آجائیں

حکمرانوں،سیاستدانوں ،جج صاحبان کومولاعلیؑ کایہ فرمان یادرکھناچاہے کہ لوگوں سے اس طرح مربوط رہوکہ تم سے ملنے کے مشتاق ہوں اورچلے جاؤ توتم پرآنسوبہائیں

 عدل مرتضویؑ فقربوذری اورصدق سلمانی نے قیصروکسری ٰ کے استبدادکوخاک میں ملاکررکھ دیا

اسلامی ریاست کامقصدعدل وانصاف کاقیام ہے جبکہ آج دنیاپرپھرظلم وبربریت کاراج ہے۔ قائدملت جعفریہ کاتنظیم شیعہ آئمہ مساجدکے عہدیداران سے خطاب

اسلام آباد( ولایت نیوز ) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلی و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ ریاست مدینہ کے قیام کاچرچاکرنے والے کردارختمی مرتبت ؐکی پیروی کرتے ہوئے اپنی ذات کوقصاص کیلئے پیش کریں،تمام ذوات قدسیہ نے عام شہریوں کی شکایت پرگورنروں تک کوسزائیں دیکرحصول انصاف کو آسان اوریقینی بنایا حضرت علی ؑ ابن ابیطالب ؑ زمانہ خلافت میں فریق مخالف کی طرح عدالتوں میں حاضرہوئے،خلیفہ دوئم نے اپنے بیٹے پرحدجاری کی ، آج دنیاپرپھرظلم وبربریت کاراج اورعدل وانصاف کافقدان ہے ، حکمرانوں ،سیاستدانوں اورمنصب عدالت پرفائزجج صاحبان کومولاعلیؑ کایہ فرمان مبارک یادرکھناچاہئے کہ لوگوں سے اس طرح مربوط رہوکہ اگرباقی رہوتوتم سے ملنے کے مشتاق ہوں اورچلے جاؤ توتم پرآنسوبہائیں ۔اس امرکااظہارانہوں نے تنظیم شیعہ آئمہ مساجد پاکستان کے چیئرمین علامہ سیدتصورحسین نقوی القمی کی سرکردگی میں عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

شیعہ آئمہ مساجد کے علمائ کی قائد ملت جعفریہ آقائے موسوی سے ملاقات
شیعہ آئمہ مساجد کے علماء کی قائد ملت جعفریہ آقائے موسوی سے ملاقات

آقای موسوی نے باورکرایاکہ اسلامی ریاست کامقصدعدل وانصاف کاقیام ہے چنانچہ ارشادقدرت ہے کہ ایمان والوانصاف کے علمبرداراورخداواسطے کے گواہ بنواگرچہ تمہارے انصاف اورگواہی کی زد میں تمہاری اپنی ذات ، والدین اوررشتہ دارہی کیوں نہ آجائیں،خداغریب ومالدارکاتم سے زیادہ خیرخواہ ہے ، اپنی خواہش نفس کی پیروی کرنے سے تم بازنہ رہے اورعدل وانصاف سے پہلوبچایاتوجان لوکہ تمہیں خداکے پاس جاناہے (سورہ نساء آیت نمبر135)۔ انہوں نے کہاکہ امیرالمومنین حضرت علی ؑ ابن ابیطالب ؑ کافرمان ذیشان ہے کہ حکومت کفرسے باقی رہ سکتی ہے لیکن ظلم سے نہیں ۔

آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے یہ بات زوردیکرکہی کہ علی ؑ وہ چیف جسٹس ہیں کہ جن کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی ، عدل مرتضویؐ فقربوذری اورصدق سلمانی نے قیصروکسری ٰ کے استبدادکوخاک میں ملاکررکھ دیا ۔انہوں نے کہاکہ اسلام عدل وانصاف کاحکم دیتاہے ،اس سے پہلے معاشرتی ا حکام میں خواتین اوریتیموں کوعدل وانصاف سے محروم رکھاجاتاتھااوروہ معاشرے میں کمزورترین تھے اسی لئے زمانہ جاہلیت میں ان سے بے انصافی کی جاتی تھی ۔انہوں نے کہاکہ سب کیساتھ عدل وانصاف کی فراہمی کامقصد یہ ہے کہ اجتماعی معاملات عدل وانصاف کے مطابق حل کیے بغیر معاشرے میں نظم وضبط قائم نہیں رہ سکتاہے ۔

انہوں نے کہاکہ عدل وانصاف کی شرائط میں یہ بات شامل ہے کہ اسے نہ صرف قائم کیاجائے بلکہ پرچم عدل کوبلندکیاجائے اور جھکنے کی صورت میں اسکی بقااورسربلندی کیلئے پوری قوت صرف کی جائے ، گواہی مقدمے کے کسی فریق کی جیت ہارکیلئے نہیں بلکہ خداکی خوشنودی کیلئے دی جائے کیونکہ سچی گواہی کے بغیرعدل وانصاف کاقیام ناممکن ہے ۔ انہوں نے کہاکہ عدل وانصاف کیلئے ضروری ہے کہ سچی گواہی دو خواہ اس سے تمہارے یاتمہارے عزیزو اقارب کے مفادات پرزدپڑے ، گواہی دیتے وقت رشتہ داروں ،قرابتداراور فریقین کے مقام ومنصب اورمعاشی ومعاشرتی حیثیت مت دیکھوخداسے بڑھ کرکسی کاکوئی خیرخواہ نہیں ہوسکتاہے ،گواہی میں امتیازبرتنا خیرخواہی نہیں بدخواہی ہے ،گواہی دیتے وقت حقائق کوپیش نظررکھواورجان بوجھ کرخواہشات کی آمیزش نہ کرو کیونکہ اصل واقعات کی صورت مسخ کرنے سے گواہی سننے والاحق کی تہہ تک نہیں پہنچ پاتا، اگرتم نے کسی فریق کوبچانے یاسزادلوانے کیلئے گول مول بات کی یاحقیقت کوچھپایا، یااپنی طرف سے کچھ ملایاتوسچی گواہی سے گریزکرکے عدل کے بجائے ظلم ونا انصافی کاذریعہ بنے توخداسے تمہاری اندرکی حالت چھپی نہیں رہے گی اورجب خداکے حضورؐ پیش ہوؤگے توتم سزاسے بچ نہیں پاؤگے ۔

قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ نے کہاکہ سورہ مائدہ کی آیہ نمبر8میں ارشاد قدرت ہے کہ کسی گروہ کی دشمنی تمہیں اتنامشتعل نہ کردے کہ تم انصاف سے پھرجاؤ،عدل کرویہ خداسے زیادہ مناسبت رکھتاہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.