فرینکفرٹ میں سعودی قونصلیٹ کے سامنے جنت البقیع احتجاجی کیمپ؛ عالمگیر یوم انہدام جنت البقیع کے پروگراموں کا آغاز

ولایت نیوز شیئر کریں

فرینکفرٹ میں سعودی قونصلیٹ کے سامنے ٹی این ایف جے جرمنی کا احتجاجی کیمپ
جرمنی میں کرونا وائرس کی پابندیوں کی صورتحال میں ٹی این ایف جے جرمنی کے رہنماؤں اور عزاداران خاتون جنت کا سعودی عرب کے قونصلیٹ / ایمبیسی کے سامنے احتجاجی کیمپ کا انعقاد

فرینکفرٹ جرمنی (ولایت نیوز) شیعیان حیدر کرارؑ کے روحانی لیڈر آغا سید حامد علی شاہ موسوی کی کال پر دنیا بھر میں یوم انہدام جنت البقیع کے پروگراموں اور احتجاج کا سلسلہ شروع ہو گیا۔

اس سلسلے میں جرمنی کے شہر فرینکفرٹ کے سعودی قونصلیٹ کے سامنے ہفتہ 15 مئی کو ایک احتجاجی کیمپ کا انعقاد کیا گیا احتجاج میں جرمنی کے قوانین کے تحت سماجی فاصلے کی پابندی کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے محدود افراد نے شرکت کی۔

احتجاج فرینکفرٹ کے ڈپلومیٹک علاقے میں ہوا جو شہر کا تجارتی مرکز بھی ہے۔

سماجی فاصلے اور احتیاطی تدابیر کا خیال رکھتے ہو ئے احتجاجی کیمپ کے شرکاء نے پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر جنت البقیع کی تعمیر نو کے نعرے درج تھے۔

دو گھنٹے تک جاری رہنے والے احتجاجی کیمپ کے دوران میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے ٹی این ایف جے جرمنی کے صدر سید شجاع حیدر زیدی نے کہا کہ سعودی حکمرانوں نے جنت البقیع کی تاراجی کرکے اسلامی, انسانی اور تاریخ جرم کا ارتکاب کیا ہے جس پر جہان تشیع کے روحانی پیشوا آغا حامد علی موسوی کی کال پر ۸ شوال کے دن پوری دنیا سراپا احتجاج ہے۔

انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں تاریخی و مذہبی مقامات کو درپیش خطرات کی ابتداء آل سعود نے 8 شوال 1925 کو آل سعود نے جنت البقیع کو مسمار کر کے کی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اجلال زیدی نے کہا کہ یونیسکو اعلی سطح مشن سعودی عرب بھجوائے اور تاریخی و مذہبی مقامات کی تاراجی پر آل سعود پر جنگی جرائم کا مقدمہ دائر کیا جائے ۔

اس موقع پر منظور کردہ قراردادوں میں فلسطین غزہ پر اسرائیلی جارحیت کی مذمت کی گئی اور اسلامی آثار کی بحالی کا مطالبہ کیا گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.