اللہ سے تجارت کرنے والوں کو کبھی خسارہ نہیں ہوتا ، ظالم کے ساتھ کاروبار ظلم کو تقویت دینا ہے، یوم دعا پر قائد ملت جعفریہ کا خطاب

ولایت نیوز شیئر کریں

ازلی دشمن چینی اور کپاس مفت بھی دے تو قبول نہ کی جائے بھارت سے تجارت نہ کرنے کا فیصلہ خوش آئند ہے،آغا حامد موسوی
وزیر اعظم نادان مشیروں سے چھٹکارا پائیں،بنیا کبھی گھاٹے کا بیوپارنہیں کرتا، غیور قومیں بھوکا رہنا قبول کر لیتی ہیں عزت پر سمجھوتہ نہیں کرتیں
بھارت مودی کو تمغوں سے نوازنے والے مسلم ممالک کو بھی آنکھیں دکھا رہا ہے،ظالم کے ساتھ کوئی بھی کاروبار کرنااس کے ظلم کو تقویت دینا ہے
حکومت غریبوں کمزوروں بے روزگاروں، بیماروں کی فلاح کیلئے تمامتر توانائیاں صرف کرے اللہ سے تجارت کرنے والوں کو کبھی خسارہ نہیں ہوتا
جب ساری امیدیں منقطع ہو جائیں تو اللہ ہی آخری امید ہے، یوم دعا سے خطاب، ملک بھر کی شیعہ جامع مساجد میں کورونا کے خاتمہ، عالم اسلام کے اتحادکیلئے دعائیں

اسلام آباد(ولایت نیوز ) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلیٰ قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہاہے کہ ازلی دشمن چینی اور کپاس مفت بھی دے تو قبول نہ کی جائے بھارت سے تجارت نہ کرنے کا فیصلہ خوش آئند ہے،وزیر اعظم نادان مشیروں سے چھٹکارا حاصل کریں ، مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر ازلی دشمن کے ساتھ تجارت میں خسارہ ہی خسارہ ہے بنیا کبھی گھاٹے کا بیوپارنہیں کرتا، کشمیری ماؤں بیٹیوں کی حرمت کو نشانہ بنانے والے مجرم ملک سے لین دین قومی غیرت کا سودا ہے غیور قومیں بھوکا رہنا قبول کر لیتی ہیں کبھی عزت پر سمجھوتہ نہیں کرتیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت علاقائی ہی نہیں عالمی امن کیلئے بھی خطرہ ہے بھارت مودی کو تمغوں سے نوازنے والے مسلم ممالک کو بھی آنکھیں دکھا رہا ہے بھارت نے کشمیریوں کی حق خوادارادیت کیلئے سلامتی کونسل میں جھوٹے وعدے کرکے پوری عالمی برادری کو دھوکہ دیا،.

انہوں نے کہا کہ انسانیت وباؤں اور بلاؤں کے سامنے بے بس و عاجز ہے جب ساری امیدیں مقطع ہو جائیں تو اللہ ہی آخری امید ہے ہر انسان بالخصوص پوری امت مسلمہ پر لازم ہے کہ کورونا کے خاتمے کیلئے خالق حقیقی کی جانب متوجہ ہوں جس نے کائنات کو وجود بخشا، کورونا سمیت تمام آفات و بلیات کیلئے خدا کی بارگاہ میں دعا ہی سب سے بڑا ہتھیا رہے جو بہترین بخشش والا اور رحمان و رحیم ہے،اہل ایمان قرآن مجید کی کم از کم سو آیات اول آخر درود کے ساتھ روزانہ پڑھیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملک گیر یوم دعا کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ ظلم و جبر کی رسیا استعماری و صیہونی قوتیں کورونا وبا کی آفت کے دوران بھی ظلم و بربریت سے باز نہیں آرہیں،انسانیت دوست قوتوں کوظالموں کے ہاتھ روکنے کیلئے اپنے فرائض ادا کرنے ہوں گے ورنہ جیسے جیسے ظلم بڑھے گا اللہ کی ناراضگی بھی بڑھتی چلی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ کروڑوں انسانوں کی زندگی موت کا مسئلہ ہے5اگست 2019 سے بھارت نے کشمیر کو دنیا کی سب سے بڑی انسانی جیل میں تبدیل کردیا ہے اور عالمی برادری کے ساتھ کئے ہوئے اپنے وعدوں سے مکر گیا ہے بھارتی توسیع پسندانہ عزائم سے تمام سارک ممالک کو شدید خطرہ ہے لہذا ایسے ظالم کے ساتھ کوئی بھی کاروبار کرنااس کے ظلم کو تقویت دینا ہے بھارت مقبوضہ کشمیر میں 5 اگست 2019 سے پہلے کی آئینی صورتحال بحال کرے، آرٹیکل 370 کی بحالی تک بھارت سے کسی قسم کی تجارت نہیں ہو سکتی۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے اس امر پر دکھ کا اظہار کیا کہ نادان مشیروں نے اکثر معاملا ت پر موجودہ حکومت سے غلط فیصلے کروائے جنہیں یو ٹرن لے کر حکومت کو واپس کرنا پڑا جس سے حکومت کی ساکھ کو مسلسل نقصان پہنچ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت بڑھتی ہوئی مہنگائی بے روزگاری اور عوامی بے چینی کے خاتمے کیلئے فوری اقدامات اٹھائے، عوام کا جینا محال ہو رہا ہے انہیں حکومت اپوزیشن محاذ آرائی سے کوئی دلچسپی نہیں۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ اللہ کے ساتھ رشتہ مضبوط کیا جائے، حکومت غریبوں کمزوروں بے روزگاروں، بیماروں کی فلاح کیلئے تمامتر توانائیاں صرف کرے اللہ سے تجارت کرنے والوں کو کبھی خسارہ نہیں ہوتا۔

درایں اثنا قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کی اپیل پر یوم دعا کے موقع پر ملک بھر کی شیعہ جامع مساجد میں کورونا وبا کے خاتمہ، مہنگائی بیروزگاری بدامنی سے نجات، عالم اسلام کے اتحاد، کشمیرو فلسطین کی تحاریک حریت کی کامیابی اور وطن عزیز کے استحکام کیلئے دعائیں مانگی گئیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.