پاک فوج نے عالمی دہشت گردوں کی’ دہشت ‘کو تار تار کردیا،حضرت امام علی نقی ؑ کا مزار شیعہ سنی وحدت کا عظیم نشان ہے،آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

بھارتی وفد کو طاقت کا مظاہرہ دکھانا بہترین جنگی حکمت عملی ہے،پاک فوج نے ساری دنیا میں اپنی مہارت کی دھاک بٹھا دی ہے
متعدد دہشت گرد حملوں کے باوجود حضرت امام علی نقی ؑ کا مزار شیعہ سنی وحدت کا عظیم نشان ہے، نقوی بخاری سادات کے جد اعلی ٰکے جشن ولادت سے خطاب

اسلام آباد(ولایت نیوز ) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلیٰ و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ پاک فوج نے دہشت گردی کے مرا کز کو بیخ و بن سے اکھاڑ کر عالمی دہشت گردوں کی’ دہشت ‘کو تار تار کردیاجس سے پوری دنیا میں پاک فوج کا ڈنکا بجنے لگاپوری دنیا کوعساکر پاکستان کی کامیابیوں سے استفادہ کرنا چاہئے ،یوم پاکستان پربھارتی وفد کو پاک فوج کی طاقت کا مظاہرہ دکھانا بہترین جنگی حکمت عملی ہے مایوس بھارتی فوجی ہجوم کے مقابلے میں پاک فوج نے ساری دنیا میں اپنی مہارت کی دھاک بٹھا دی ہے ، دہشت گردی کے خلاف آخری معرکہ جیتنے تک پوری قوم پاک فوج کے ساتھ ایستادہ ہے، مودی تمام تر چانکیائی ہتھکنڈوں سے پاکستا ن پر حملہ آور ہے پاکستان کے دوقومی نظریہ و ایٹمی قوت سے خائف ازلی دشمن پر سی پیک منصوبے نے مزید وحشت طار ی کررکھی ہے،متعدد دہشت گرد حملوں کے باوجودسامرا میں حضرت امام علی نقی ؑ کا مزار آج بھی شیعہ سنی وحدت کا عظیم نشان ہے امام علی نقی کی تعلیمات کے مصطفوی ؐ چشمے سے پوری دنیا فیض یاب ہو رہی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ اجر رسالت ؐ کے موقع پر نقوی بخاری سادات کے جد اعلیٰ حضرت امام علی نقی علیہ السلام کے جشن ولادت پرنور کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ ضرب عضب کے نتیجے میں دہشت گردوں کے خلاف تاریخی کامیابیاں حاصل کی گئیں بیرونی جنگوں کا مقابلہ آسان ہو اکرتا ہے پاک فوج نے ایک ایسی جنگ لڑی جس میں دشمن گھر کے اندر بھی موجود تھااور ہے کیونکہ دشمن نے ایسا مائنڈ سیٹ تیار کردیا تھا کہ اسلام کے نام پر ہی اسلامی تعلیمات کو پر حملہ کیا جارہا تھا نئے آرمی چیف نے جہاں دہشت گرد مراکز کے خاتمے کیلئے خیبر فور سمیت متعدد آپریشن کئے وہاں معاشرے میں پھیلے دہشت گردوں کے سرپرستوں کے خاتمے کیلئے ملک گیر آپریشن رد الفساد کا آغاز کیا گیا جسکی کامیابی کیلئے ہر محب وطن دعا گو ہے۔انہوں نے کہا کہ دشمنوں کی سازشوں کے سبب پاکستان کی دفاعی خارجی داخلی تمام پالیسیاں متاثر ہوتی رہی ہیں1979 افغانستان میں روسی مداخلت کے وقت بھی ان تمام شعبوں کو بیک وقت آزمائش سے گزرنا پڑا اور پھر نائن الیون کے بعد ایک دفعہ پھر پاکستان کو فرنٹ لائن سٹیٹ بنا کر دہشت گردی میں پھنسا دیا گیاپاک فوج اور ادارے دہشت گردی متواتر نبردآزما رہے لیکن اے پی ایس کے سانحے کے بعد پاک فوج نے دہشت گردی کے خلاف قوم کو یکجا کرنے اور نیشنل ایکشن پلان کی صورت ایک واضح سمت متعین کرنے میں اہم کردار ادا کیا ۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ روز بروز خطے میں اہم تبدیلیاں رونما ہو رہی ہیں افغانستان میں حکومت کی جانب سے طالبان کو مذاکرات کی دعوت کے باوجود دہشت گردی کی ایک لہر چل نکلی ہے جس کے پیچھے بھارتی عناصر کانمایاں ہاتھ نظر آتا ہے جو دہشت گردی بڑھا کر افغانستان کو پاکستان سے دور کررہا ہے اور اپنے قدم بھی وہاں جما رہا ہے کیونکہ جب سے مودی بر سر اقتدار آیا ہے پاکستان کا پیچھا نہیں چھوڑ رہااور پاکستان و واچ لسٹ میں شامل کروانے کیلئے ایڑی چوٹی کا زور لگا رہا ہے سفارتکاروں کو بھی ڈرا دھمکا رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ سی پیک کی جلد از جلد تکمیل سے پاکستان اقتصادی ترقی کی نئی راہوں پر گامزن ہو جائے گا یہی تصور دشمن کے بے چین کئے ہوئے ہے۔آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ قرارداد پاکستان کے مطابق وطن عزیز کو فلاحی اسلامی ریاست بناناایک فرض اور قرض ہے جسکی ادائیگی کیلئے پوری قوم کو انفرادی و اجتماعی کردار ادا کرنا ہوگا،قرارداد پاکستان نصب العین کا تعین تھا جو کسی قوم کو حاصل ہو جائے تو منزل تک رسائی دشوار نہیں رہتی ، اس فلاحی اسلامی ریاست کی منزل تک وطن کو پہنچا کر ہی بانیان پاکستان کے خواب کو شرمند تعبیر کیا جاسکتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.