ہم اس ملک میں کرایے دارنہیں پاکستان کی بنیادوں میں شیعیت کاخون ہے، 25 رجب کو قوم پرامن احتجاج کیلئے نکلے، ذاکراقبال شاہ بجاڑ؛ یوم شریکۃ الحسینؑ کے جلوسوں میں شیعہ حقوق کیلئے صدائے احتجاج

ولایت نیوز شیئر کریں

یوم شریکۃُ الحسین ؑ روایتی مذہبی جذبے اور عقیدت و احترام کے ساتھ منایاگیا
ملت کے حقوق،دین و وطن کیلئے ہر قربانی دینے کے عہد کا اعادہ،عقائدمیں مداخلت کسی صورت میں بھی قبول نہیں۔
حضرت سیدہ زینبؑ نے حسینیت ؑ کو پوری دنیا میں عام کرنے کیلئے مرکزی کردار ادا کیا۔مجالس سے علامہ بشارت امامی، علامہ قمرزیدی اوردیگرذاکرین کاخطاب

راولپنڈی ( ولایت نیوز) قائد ملتِ جعفریہ آغا سیدحامدعلی شاہ موسوی کے اعلان کے مطابق مجاہدہِ کربلا حضرت سیدہ زینب بنت علی ؑکی شہادت کے سلسلہ میں یوم شریکۃ الحسین ؑ جمعرات کو مذہبی جذبے اور عقیدت و احترام کیساتھ منایا گیا۔

اس موقع پر راولپنڈی ریجن میں مذہبی وماتمی تنظیموں کے زیراہتمام امامبارگاہوں اور عزاخانوں میں مجالسِ عزاء اور ماتمداری کے پروگرام منعقد ہوئے جبکہ خواتینِ کی مجالس میں حضرت ثانی زہرا ؐ کے تابوت برآمد کیے گئے۔

ڈاکٹر اشتیاق کاظمی کے زیر اہتمام مرکزی مجلس قصر ابوطالب ؑ میں منعقد ہوئی جس سے ذاکر اقبال حسین شاہ بجاڑ، ذاکر علی رضا کھوکھر، ذاکر ثقلین گھلو ، ذاکر مرتضی عاشق لوٹیاں والا اور دیگر ذاکرین نے خطاب کیا ۔

اس مو قع پر خطاب کرتے ہوئے ذاکر اقبال حسین شاہ بجاڑ نے کہا کہ ہم اس ملک میں کرایے دار نہیں پاکستان کی بنیادوں میں شیعیت کا خون ہے قوم قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کی کال پر اپنے حقوق کیلئے 25 رجب کو گھروں سے نکلے ، ہم پرامن احتجاج کرکے اپنا حق لیں گے اور دنیا کو بتائیں گے حسینیت اور یزیدیت کے جلوسوں میں کیا فرق ہے ۔

اسلام آباد میں زوارافتخارحسین،زوارحاجی وحیدحسین کے زیر اہتمام حسین آبادمیں سالانہ قدیمی جلوس کی برآمدگی کے موقع پر مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے علامہ سیدقمرحیدرزیدی نے کہاکہ حضرت زینب ؑ کی پاکیزہ سیرت صرف خواتین نہیں بلکہ تمام عالم بشریت کے لئے نمونہ عمل ہے۔ انہوں نے کہاکہ حضرت سیدہ زینب سلام اللہ علیہا خانوادہِ عصمت و طہارت کی وہ باعظمت اور جراتمند خاتون ہیں جنہوں نے الہی اصولوں اور دین و شریعت کی بقاء و سربلندی کیلئے میدانِ کربلا میں پیش کی گئی انمول قربانیوں کو اجاگر کرنے اور حسینیت ؑ کو پوری دنیا میں عام کرنے کیلئے مرکزی کردار ادا کیا۔

علامہ بشارت امامی نے کہا کہ کربلا کی شیر خاتون حضرت زینب ؐ نے شام و کوفہ کے بازاروں اور درباروں میں اپنے جراتمندانہ خطبات کے ذریعے یزیدی سازشوں کو ناکام بنادیا اور یزیدیت کو ذلیل و رسوا کرکے پرچم اسلام کو ہمیشہ کیلئے سربلند کردیا۔۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں گونجنے والی اذانوں کی صدائیں حضرت زینب ؐ بنت ِ علی ؑ کی مرہونِ منت ہیں جنہوں نے وارثِ خونِ حسین ؑ حضرت امام سجاد ؑ کے ساتھ مل کر حسینیت کو چار چاند لگا دیئے اور آج کوئی بھی اسلام کا حلیہ بگاڑنے کی جرات نہیں کرسکتا۔انہوں نے کہاکہ مکتب تشیع کے خلاف ملک میں ہونے والی زیادتیوں کے خلاف پرامن صدائے احتجاج بلندکرناہمارابنیادی وآئینی حق ہے۔

انہوں نے باوکرایاکہ ملت کے حقوق،دین و وطن کیلئے ہر قربانی دینے کے عہد کا اعادہ،عقائدمیں مداخلت اورسراسرزیادتی ہے جوکسی صورت میں بھی قبول نہیں اس موقع پرشرکاء مجلس نے25رجب ملک گیر ماتمی احتجاج میں بھرپورشرکت کاعہدکیا۔ مجلس سے علامہ سیدشیرازکاظمی، ذاکرذریت عمران شیرازی، ذاکریاسررضاجھنڈوی، ذاکرعلی نقی کنگ،ذاکرعلی احمدجوئیہ، علامہ فخرعباس عابدی نے بھی خطاب کیا۔ اختتام مجلس جلوس علم برآمدہواجواپنے مقررہ راستوں سے ہوتاہواامام بارگاہ میں اختتام پذیرہواجس میں اسلام آباداورراولپنڈی کے ماتمی دستوں نے ماتمداری کی۔

انجمن کنیزان امام العصر والزمان کے زیر اہتمام شعب ابی طالب میں یوم شریکۃ الحسین کی مناسبت سے مجلس عزامنعقد ہوئی جس سے خطاب کرتے ہوئے خطیبہ آپا سیدہ حسین نے کہا کہ حضرت زینب سلام اللہ علیہا عظمت و شان خدیجہ ؑ،جہانِ نسواں کی رہنما،انقلابِ اسلامی کے علمبردار،پیغام کربلا کی مبلغہ اور کربلا میں حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کی نمائندہ تھیں۔

دربار سخی شاہ پیارا کاظمیؒمیں مجلس شریکۃ الحسین ؑ سے علامہ سیدمطلوب حسین تقی،ذاکرجابرنیرنے خطاب کیا۔ اختتام مجلس مختلف ماتمی دستوں نے ماتمداری کی۔ امامبارگاہ اہلبیت ؑ واہ کینٹ میں علامہ حسین مقدسی“امامبارگاہ قصر امام موسیٰ کاظم سادات کالونی میں علامہ تصور حسین نقوی، امام بارگاہ قصرابوطالب مغل میں مجلس سے ذاکرثقلین عباس گھلو، ذاکرذاکر علی نقی کنگ نے یوم شریکۃ الحسین ؑ کی مجالس سے خطاب کیا۔ اختتام مجلس ماتمداری ہوئی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.