ملک میں کوئی شیعہ سنی لڑائی نہیں سانحہ مچھ ازلی دشمن کی گھناؤنی سازش ہے،قاتلوں کو کیفرکردار تک پہنچایا جائے ، آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

سانحہ مچھ ازلی دشمن کی گھناؤنی سازش ہے،ملک میں کوئی مکتبی تنازعہ نہیں۔آغا سید حامد موسوی
پاکستان دشمن قوتوں کو سی پیک منصوبہ اور گوادر ہضم نہیں ہورہا،پرامن شہری شیڈول فور میں گرفتارجبکہ کالعدم گروپ دندناتے پھر رہے ہیں
سانحے کے مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے، متاثرہ خاندانوں کے غم میں پوری قوم برابر کی شریک ہے۔قائد ملت جعفریہ کا ردعمل

اسلام آباد(ولایت نیوز) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلیٰ قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے مچھ بلوچستان کوئلہ فیلڈ میں دہشتگردوں کی فائرنگ سے ہزارہ برادری کے 10سے زائد کان کن مزدوروں کے سفاکانہ قتل کی پرزور مذمت کرتے ہوئے اسے ازلی دشمن کی گھناؤنی سازش قراردیا ہے۔

ہیڈکوارٹر مکتب تشیع سے جاری کردہ ایک بیان میں انہوں نے واضح کیا کہ ملک میں کوئی شیعہ سنی لڑائی نہیں،بیگناہ مزدوروں پر حملہ اور انکا بہیمانہ قتل پاکستان دشمن قوتوں کی سازش ہے جنہیں سی پیک اور گوادر ہضم نہیں ہورہے۔ متواتر دہشت گردی کی وجوہات کا تدارک کئے بغیر بدامنیکا خاتمہ ناممکن ہے

آقای موسوی نے اس امر پر گہری تشویش کا اظہار کیا کہ معصوم شہریوں کو نہ صرف نشانہ بنایا جارہا ہے بلکہ بلوچستان میں پر امن لوگ شیڈول فور میں شامل ہیں جبکہ کالعدم گروپوں کے شر پسند عناصر کھلے عام دندناتے پھر رہے ہیں جو سراسر زیادتی اور نیشنل ایکشن پلان کے منافی ہے۔انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ پرامن رہ کر دشمن کی سازش کو ناکام کردیں اورحکومت سانحہ مچھ کے مجرموں کو فی الفور گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچائے، زخمیوں کو علاج معالجہ کی خصوصی سہولیات فراہم کی جائیں۔

قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے شہدائے سانحہ مچھ کے متاثرہ خاندانوں سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پوری قوم ان کے غم میں برابر کی شریک ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.