ملک بھر میں عید الفطر کے روح پرور اجتماعات

ولایت نیوز شیئر کریں

عالم اسلا م مشترکہ دشمن کیخلاف متحد ہوجائے ،عید الفطر مسلمانوں کی وحدت و اخوت کا نشان ہے
ممنوعہ گروپوں کو آمدہ الیکشن میں حصہ لینے کیلئے نااہل قراردیا جائے ،پائیدار امن کے قیام کیلئے نیشنل ایکشن پلان کی ہر شق پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے
عید ا لفطر کے موقع پر فقہ جعفریہ کے مرکزی اجتماعات سے مفتی باسم‘علامہ قمرزیدی،علامہ مطلوب تقی،علامہ محسن ہمدانی،علامہ زوار مدنی،علامہ حسین مقدسی اوردیگر کا خطاب

راولپنڈی ( ولایت نیوز) عیدُ الفطرکے موقع پر ملک کے دیگر شہروں کی طرح راولپنڈی اورگردونواح کی جامع مساجد اور کھلے مقامات پر فرزندانِ توحید نے بارگاہِ خداوندی میں سربسجود ہوکر ماہِ صیام کی رحمتوں،برکتوں اور نعمتوں پر اظہار تشکر کیا۔ فقہ جعفریہ کا نماز عید الفطر کا مرکزی اجتماع علی مسجد سیٹلائٹ ٹاؤن راولپنڈی کے قریب میونسپل بوائز ہائی سکول کے وسیع ہال میں ہوا جہاں قائد ملتِ جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کے نمائندہ خصوصی مفتی سید باسم عباس زاھری نے نمازِ عید پڑھائی۔اس موقع پرعید الفطر کا خطبہ دیتے ہوئے انہوں نے باورکرایا کہ انسان کو عید الفطر عبادت الہیٰ میں بسر کرنی چاہیئے ‘امیر المومنین حضرت علی ابن ابی طالب ؑ کا فرمان ذیشان ہے کہ انسان جس دن خدا کی معصیت و نا فرمانی نہ کرے وہی روز عید ہے ۔مفتی باسم نے کہا کہ عید الفطر کا ایک اہم عمل زیارت حضرت امام حسین ؑ پڑھنا ہے جو امام عالی مقام سے اظہار تشکر ہے کیونکہ اگر آج اسلام ہر سو پھیل رہا ہے اور آثار اسلام باقی ہیں تویہ صرف نواسہ رسول ؐ شہزادہ کونین حضرت امام حسین ؑ کی تپتے صحرائے کربلا میں پیش کی گئی عظیم قربانی کا ثمر ہے جسے ذبح عظیم قراردیا گیاہے ورنہ آج نمازیں،روز ے اور شب ہائے رمضان کی تلاوت نہ ہوتی بلکہ سارا اسلام نذر طاق نسیاں ہوجا تا ۔اس موقع پر علامہ سیدقمر حیدرزیدی نے خطاب کرتے ہوئے قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کا پیغام عید پیش کیا جس میں انہوں نے باورکرایا کہ عید الفطر مسلمانوں کی وحدت و اخوت کا نشان ہے ، اس موقع پر مجتمع ہو کر عالم اسلام کے اتحاد و یکجہتی اور اخوت و بھائی چارے کا عملی مظاہرہ کیا جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس پاکیزہ اور روحانی مظاہرے کو عالمی استعمار اپنے لئے خطرہ گردانتا ہے حالانکہ یہ کسی کے خلاف کوئی محاذ نہیں بلکہ ذات الہیٰ کی بارگاہ میں سجدہ ریز ہو کر اطاعت و بندگی کا عاجزانہ اظہار ہے۔شرکائے نماز عید نے ایک قرارداد متفقہ طور پر منظور کی جس میں نگران حکومت کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کے نرخوں میں اضافے کی مذمت کرتے ہوئے باورکرایا گیا کہ اس سے یہ تاثر ملتا ہے کہ منتخب حکومت ہو یاعبوری نگران سیٹ اپ اقتصادی فیصلوں میں حکمرانوں کے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں،آئی ایم ایف اور عالمی بینک کی جانب سے ہدایات پر عملدرآمد حکمرانوں کی مجبوری ہے ۔قرارداد میں عوام کو مہنگائی کا ہوشربا تحفہ مرے ہوؤں کو مارنے کے مترادف قراردیا گیا اورنگران حکومت پرزوردیا گیا کہ پالیسی معاملات آمدہ انتخابات کے نتیجے میں آنے والی منتخب حکومت پر چھوڑ دیئے جائیں اور نگران حکومت شفاف انتخابات کے انعقاد پر توجہ مرکوز رکھے ۔ قرارداد میں مظلومین و محرومین کی حمایت جاری رکھنے کے عہد کا اعادہ کرتے ہوئے کشمیر وفلسطین میں جاری جبرواستبداد کی پرزور مذمت کی گئی ۔ اس موقع پر عالم اسلام کے مصائب و آلام کے خاتمہ ،مقبوضہ مسلم علاقوں کی بازیابی ،کشمیروفلسطین کی آزادی ،وطن عزیز پاکستان کی سلامتی و استحکام،پائیدار امن کے قیام ، آپریشن ردالفساد کی کامیابی اوردہشتگردی کے خاتمہ کیلئے بارگاہِ خداوندی میں سربسجود ہوکر خضوع و خشوع کے ساتھ دعائیں کی گئیں۔جامع مسجد سخی شاہ پیارا چوہڑ ہڑپال میں علامہ سید مطلوب حسین تقی ،قصر ابوطالب مغل آباد میں علامہ محسن علی ہمدانی،سپورٹس کمپلیکس لیاقت باغ میں علامہ زوار حسین مدنی ،جامع مسجد اہلبیت ؑ میں علامہ حسین مقدسی‘جامع مسجد شاہ چن چراغ میں علامہ سجاد حسین گردیزی‘جامع مسجد جاگیر علی اکبر میں علامہ وقار حسین نقوی‘جامع مسجد قصر زینب کمال آباد میں علامہ قلب عباس بخاری ،مسجد و امامبارگاہ قصر شبیر ڈھوک سیداں میں علامہ زہاہد الحسن نے نماز عید الفطر کے مرکزی اجتماعات کی امامت اور خطاب کیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.