سقوطِ ڈھاکہ فکر جناح ؒ و اقبالؒ سے روگردانی کا شاخسانہ تھا، قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

سقوطِ ڈھاکہ فکر جناح ؒ و اقبالؒ سے روگردانی کا شاخسانہ تھا۔ آغا حامد موسوی
سانحہ اے پی ایس قومی تاریخ کا المناک باب ہے،شیاطین ثلاثہ جنوبی ایشیا کو نئے امتحانات سے دو چار کرنے میں مصروف ہیں
کشمیر و فلسطین پر مسلم ممالک کے منتشر موقف نے آر ایس ایس اور اسرائیل کو ظلم و ستم کا این آر او دے رکھا ہے
پوری قوم شہدائے اے پی ایس کو سلام عقیدت پیش کرتی ہے،استعماری ثلاثہ کو افغانستان میں کٹھ پتلی حکومت کا ا نہدام ہضم نہیں ہورہا
مہنگائی کے تھپیڑوں سے بد حال عوام کی زندگی،حکومت تسلیوں کے بجائے قیمتوں میں کمی کرے۔عہدیداران سے خطاب
اسوہ حضرت فاطمہ زہرا کامل نمونہ ہے۔قائد ملت جعفریہ کا 13جمادی الاول تا 3 جمادی الثانی ایام عزائے فاطمیہ منانے کا اعلان

اسلا م آباد( ولایت نیوز) سرپرست ِ اعلیٰ سپریم شیعہ علما ء بورڈ قائد تحریک نفاذ فقہ جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ شیاطین ثلاثہ جنوبی ایشیا کو نئے امتحانات سے دو چار کرنے لئے سازشوں میں مصروف ہیں، سانحہ سقوط ڈھاکہ فکر جناح اور اقبال سے رو گردانی کا شاخسانہ تھا، آرمی پبلک سکول کا سانحہ قومی تاریخ کا المناک باب ہے جو حکمرانوں کے لئے سبق آموز ہے۔

انہوں نے کہا کہ استعماری ثلاثہ کو افغانستان میں کٹھ پتلی حکومت کا ا نہدام ہضم نہیں ہورہا، کشمیر و فلسطین پر مسلم ممالک کے منتشر موقف نے آر ایس ایس اور اسرائیل کو ظلم و ستم کا این آر او دے رکھا ہے، حکمران اور سیاستدان دشمنانِ دین و وطن کو زیر کرنے کیلئے سیسہ پلائی ہوئی دیوار بن جائیں،، پوری قوم شہدائے سانحہ سقوطِ ڈھاکہ اور شہدائے اے پی ایس پشاور کو سلام عقیدت پیش کرتی ہے، عالمی شیطان امریکہ سی پیک کو سبوتاژ کرنے کے لئے ایڑھی چوٹی کا زور لگا رہا ہے، قوم پاک فوج کی پشت پر کھڑی ہے،مہنگائی کے تھپیڑوں سے بد حال عوام کی زندگی اجیرن ہو گئی ہے، ارباب اقتدار دلاسوں اور تسلیوں پر اکتفا کر نے کے بجائے اشیائے ضروریہ عوام کی پہنچ تک لانے کے لئے قیمتوں میں کمی کریں،وباؤں اور بلاؤں سے نجات کے لئے احتیاطی تدابیر کیساتھ ساتھ قرآنی تعلیمات پر عمل کرکے دعاؤں اور مناجات کا وسیلہ اختیار کیا جائے، جس کے لئے اسوہ حضرت فاطمہ زہرا کامل نمونہ ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو ٹی این ایف جے کے مرکزی عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر شہید علامہ ناصر عباس ، شہدائے سانحہ اے پی ایس اور جملہ شہدائے دین و وطن کیلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی ۔

اس موقع پر انہوں نے 13جمادی الاول تا 3جمادی الثانی ایام عزائے فاطمیہ ؑ جبکہ 15جمادی الاول کو یوم ولادت پر نور حضرت امام زین العابدین ؑمنانے کا اعلا ن بھی کیا۔

آقای موسوی نے باورکرایا کہ ازلی دشمن 27فروری کے زخم کو نہیں بھولا جس کے لئے مصنوعی لیپا پوتی کے لئے آئے روز نئے ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے،انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی سے بڑی مثال دنیا میں کہیں نہیں ملتی جہاں مظلوم کشمیریوں پر عرصہ حیات تنگ ہے۔

آغا حامد موسوی نے کہاکہ نائن الیون کا ڈرامہ رچا کر امریکہ نے پاکستان کو فرنٹ لائن پر رکھا اور پاکستان کو مزید افتراق سے دوچار کرنے کیلئے نئے جال بن رہا ہے۔

انہوں نے یہ بات زوردیکر کہی کہ سانحہ آرمی پبلک سکول کے بعد نیشنل ایکشن پلان کی روشنی میں شروع کیے گئے عساکر پاکستان کے آپریشن ضرب عضب نے دہشتگردوں کے بخیے ادھیڑ کررکھ دیئے اور اسوقت بھی آپریشن رد الفساد شد و مد کیساتھ جاری ہے جو دہشتگردوں کے تابوت میں آخری کیل ثابت ہوگا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.