نبی ؐ کی آل کو در در پھرانے والے گستاخانہ خاکوں پر راست اقدام نہیں لے سکتے ،مذمتی قراردادوں سے کچھ نہیں ہو گا ہالینڈ کا بائیکاٹ کیا جائے ،قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

اگر جنت البقیع و جنت المعلی اورآثار نبوی کو زمیں بوس نہ کیا جاتا توکسی کو شان رسالتؐ میں توہین کی جرات نہ ہوتی

سید العربؐ کی توہین پر عرب لیگ کیوں سورہی ہے شام یمن پر حملوں کی راہ ہموار کرنے والی اوآئی سی کہاں ہے؟

مسلمان ممالک عزت کی بحالی اور ناموس مصطفی ؐکا تحفظ چاہتے ہیں تو ہالینڈ کا بائیکاٹ‘ سفارتی تعلقات ختم کردیں ، آغا حامد موسوی

اقوام متحدہ جنگوں کو روکنے کے بجائے انہیں ہوا دینے کا ادارہ بن گئی ہے گستاخانہ خاکوں پر کبھی ایکشن نہیں لے گی، اس کا رویہ دوہرا ور منافقانہ ہے

سیدہ زینب بنت علی ؑ نے ناموس رسالتؐ پر ہر حملے کا با طل شکن جواب دیا ظلم و ستم گری کو مغلوب اور رسوائے تاریخ کردیا، یوم شریکۃ الحسین ؑ سے خطاب

اسلام آباد( ولایت نیوز) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلی و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ مسلمان ممالک اگر اقوام عالم میں کھوئی ہوئی عزت کی بحالی اور ناموس مصطفی کا تحفظ چاہتے ہیں تو ہالینڈ کا بائیکاٹ کر یں سفارتی تعلقات ختم کرکے اس کے سفراء کو اپنے ممالک سے نکال دیں اور اپنے سفیروں کو واپس بلوا لیں ، اگر مسلم ممالک میں آثار نبوی ؐ ، ؐ و آل رسول ؐ امہات المومنینؓ پاکیزہ صحابہ کبار کے مزارات اور شعائرِ دین و شریعت کو مسمار نہ کیا جاتا اور جنت البقیع و جنت المعلی کے مقامات مقدسہ کو زمیں بوس نہ کیا جاتا توہالینڈ سمیت دنیائے کفر کے کسی شیطان کو شان رسالتؐ میں توہین کے ارتکاب کی جرات نہ ہوتی ، مذمتی قراردادوں سے کچھ نہیں ہو گا،سید العربؐ کی توہین پر عرب لیگ کیوں سورہی ہے شام یمن پر حملوں کی راہ ہموار کرنے والی اوآئی سی کہاں ہے ،آج اگر دنیائے کفر اسلامی شعائر اور توہین رسالت کی مرتکب ہو رہی ہے تو یہ سب کیا دھرا مسلم حکمرانوں اور مسلم تنظیموں کا ہے نبی ؐ کی آل کو در در پھرانے والوں کی تائید کرنے والے کبھی گستاخانہ خاکوں پر راست اقدام نہیں لے سکتے ، مکتب علوم الہی کی تربیت یافتہ خاتون سیدہ زینب نے بعد از شہادت حسین ؑ شعائر اسلامی کے تحفظ کی جدوجہد کو سنبھالا ، بازاروں درباروں میں ناموس رسالتؐ پر ہر حملے کاا پنے خطبات سے با طل شکن جواب دیا، نبی کریم ؐ کی شیر دل نواسی سید زینب ؑ نے قیدخانوں کی بدترین صعوبتیں برداشت کرکے ظلم و ستم گری کو مغلوب اور رسوائے تاریخ کردیا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نواسی رسولؐ سیدہ زینب بنت علی ؑ کی شہادت کی مناسبت سے ملک گیر ’’یوم شریکۃ الحسین ؑ ‘‘کے موقع پر عزائی اجتما ع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے اس امر پر دکھ کا اظہار کیا کہ آج بھی سرزمین حجاز پر آثار مصطفوی ؐ کو مٹانے کا سلسلہ جاری ہے چند ماہ پہلے تاریخی شجر رسول ؐ کو صفحہ ہستی سے مٹا دیا گیاغرضیکہ95فیصد اسلامی آثار کو مٹادیا گیا ہے جبکہ یہودو نصاری کے آثار کو عزت بخشی جا رہی ہے بت پرستی کیلئے مندر اور گرجا گھر بنائے جارہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ گستاخانہ خاکوں پر کبھی ایکشن نہیں لے گی یواین کا دوہرا معیار اور امریکی لونڈی کا کردار دنیا پر عیاں ہو چکاہے،مسلم مسائل کے ساتھ اس کا رویہ دوہرا ور منافقانہ ہے اگر سوڈان مشرقی تیمور میں استصواب رائے کروایا جا سکتا ہے تو کشمیر و فلسطین میں کیوں نہیں اقوام متحدہ جنگوں کو روکنے کے بجائے انہیں ہوا دینے کا ادارہ بن گئی ہے۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ امریکہ احسان فراموشی کا چیمپئین ہے اسے دنیا کی واحد سپر پاور پاکستان نے بنوایا، امریکی جنگ میں پاکستان نے فرنٹ لائن سٹیٹ کا کردار ادا کیا پون لاکھ جانوں کا نذرانہ دیا نتیجے میں پاکستان کے شہروں کے شہر اجاڑ دیئے گئے لیکن ڈومور کا مطالبہ ختم نہ ہوانہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ 16ذو الحجہ حضرت زینب بنت علی ؑ کی شہادت کا دن ہے جو اسلام و قرآن کے انسان ساز مکتب میں تربیت پانے والوں میں نمایاں حیثیت رکھتی ہیں جن کی حیات طیبہ دنیائے نسوں کیلئے شجاعت و دلیری تقوی و فضیلت کا مکمل درس ہے ‘پ دشت نینوا کے شہیدوں کے ناحق بہائے گئے خون کی حقیقی پاسدار و نگہبان تھیں آپ نے اپنی پوری ہستی اور وجود کے ساتھ شہدائے کربلا کی موافقت کا حق ادا کردیااور شہداء کے پر عظمت و شہرت نوموں کو تاریخ انسانیت میں جاوداں کردیا۔کربلا کے معرکہ کارزار میں میں خاندان رسالت ؐ کے شیردل مردو خواتین نے اس دنیا کو عدل و انصاف اور شرف و تقوی کا پیغام دیا ہے اور پنے دلیرانہ عملیات کے ذریعے ظلم و بربریت خے خلاف جدوجہدکے ایسے پیغام سے نوازا ہے کہ کائنات میں جس کا مثل و نظیر نہیں ملتاان سب کے درمیان خاتو ن شجاع دختر علی ابن ابی طالب ؑ اور خواہر فضیلت حسن و حسین سیدہ زینب کا طرز عمل روشن اور درخشاں ترین ہے ۔آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے واضح کیا کہ ریاست مدینہ کا نظام لانے کیلئے اللہ پر توکل و بھروسہ کرنا ہوگااور شیطانی لابیوں سے جان چھڑانی ہوگی ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.