زائرین کی کوئٹہ تفتان آمدورفت کا مسئلہ مستقلاً حل کیا جائے حکومت اپنے وعدوں پر عمل کرے،تحریک نفاذ فقہ جعفریہ 

ولایت نیوز شیئر کریں

عالم ا سلام کی کامرانی و کامیابی کا راز تعلیمات مصطفویؐ پر چلتے ہوئے وحدت و اخوت اپنانے میں مضمر ہے، عازمین عمرہ و زیارات سے خطاب

اسلام آباد( ولایت نیوز)تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سیکرٹری جنرل شجاعت علی بخاری نے کہا ہے کہ کوئٹہ تفتان آمدورفت میں شدید مسائل سے دوچار زائرین مقامات مقدسہ کا مسئلہ مستقلاً حل کیا جائے ،حکومت وعدے کے مطابق کوئٹہ زاہدان ریل سروس کا فوری اجراء کرے ، آزادی کشمیریوں کا حق ہے جسے بھارتی استبداداور اسکی سرپرست استعماری قوتیں زیادہ عرصہ سلب نہیں رکھ سکتیں ،کشمیر و فلسطین کے مظلوموں سے لاتعلق مسلم حکمرانوں کو خدا کی عدالت میں جوابدہ ہونا پڑے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے الحاج نجم عباس کربلائی کی زیر قیادت عازمین عمرہ و زیارات حجاز وعراق ایران کے وفد سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

شجاعت علی بخاری نے کہا کہ وزیر داخلہ ، سیکرٹری داخلہ ، بلوچستان کے صوبائی حکام نے متعدد ملاقاتوں اور مذاکرات میں زائرین کے مسائل کے حل کیلئے ٹی این ایف جے کے مطالبات حل کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی جن میں سے ماسوائے چند امور کے اکثر تشنہ تکمیل ہیں بزرگان دین کے ساتھ محبت و عقیدت رکھنے والے زائرین کو سہولیات فراہم کرنا ریاست و حکومت کا بنیادی فریضہ ہے آئے روز زائرین کی آمدورفت کا مسئلہ کھڑا ہو جانے سے مملکت کی جگ ہنسائی ہوتی ہے لہذا زائرین کی آمدورفت کیلئے مستقل اور دیرپا منصوبوں پر عمل درآمدکیا جائے اور غریب زائرین کو مافیاؤں سے نجات دلائی جائے ۔

شجاعت بخاری نے کہاکہ بردار اسلامی ممالک میں ایک مقدس فریضے کیلئے جانے والے زائرین عمرہ و زیارت کے دوران مقدس مقامات پر پاکستان کے استحکام دہشت گردی کے انہدام اورکشمیریوں فلسطینیوں کی حالت زار کے خاتمے کیلئے دعائیں بھی کریں اور وہاں موجود دیگر ممالک کے برادران کو بالخصوص کشمیریوں پر ہونے والے بدترین بھارتی مظالم سے آگاہ کریں اور عالمی رائے عامہ کو بیدار کرنے میں اپنا موثر کردار ادا کریں تا کشمیر کاز کی عملاً مدد کی جاسکے ۔انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے کشمیریوں کی تحریکی آزادی کے ساتھ عالمی دنیا کا رویہ بالعموم اور امت مسلمہ کا بالخصوص بیگانگی پر مبنی ہے یہی وجہ ہے کہ کشمیریوں کا قاتل بھارتی وزیر اعظم مود ی کو اکثر مسلم ممالک میں بھرپور پذیرائی دی جارہی ہے جو لمحہ فکریہ ہے اور عالم اسلام کی وحدت و اخوت کے منافی ہے ۔

شجاعت بخاری نے کہا کہ دنیا کے کسی خطے میں کسی مسلم کو کانٹا چبھ جانے پر ہندوستان و عرب اور افریقہ و ایشیا کے مسلمانوں کو مضطرب ہو جانا ہی اصل جذبہ اخوت ہے جس کی تعلیم نبی کریم ؐ نے دی اور جس کا خواب حکیم الامت علامہ محمد اقبالؒ ،جمال الدین افغانیؒ ،آیۃ اللہ باقر الصدرؒ جیسے مسلمانوں فلسفیوں نے دیکھا تھا۔انہوں نے کہا کہ عالم ا سلام کی کامرانی و کامیابی کا راز صرف اور صرف تعلیمات مصطفوی پر چلتے ہوئے وحدت و اخوت اپنانے میں مضمر ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.