جمعہ کو یوم یکجہتی کشمیر منانے کا اعلان ؛ٹی این ایف جے بلوچستان کے کارکن نذر حسین چنگیزی سمیت بیگناہ شہریوں کی ٹارگٹ کلنگ نیشنل ایکشن پلان پر عملد رآمد نہ ہونے کا نتیجہ ہے ، آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

جمعہ کو یوم یکجہتی کشمیر کی حکومتی کال پر پوری دنیا ئے مظلومیت کیساتھ اظہار یکجہتی کر کے واضح کیا جائے کہ امت مسلمہ دشمنان اسلام کے مقابلے میں سیسہ پلائی ہوئی دیوار ہے
امور مسلمین کا اہتمام نہ کرنے والا مسلمان کہلانے کا حقدار نہیں،ٹی این ایف جے مظلومین کی حمایت ، ظالمین سے بیزاری کا مشن جاری رکھے گی ۔ قائد ملت جعفریہ کا راولپنڈی ضلعی عہدیداران سے خطاب

اسلام آباد( ولایت نیوز )سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلی و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ وطن عزیز پاکستان اسوقت اندرونی و بیرونی خطرات میں گھرا ہوا ہے ،دشمن ہمیں کمزور کرنے پر پوری قوت صرف کر رہا ہے ، اقوام متحدہ سمیت تمام عالمی اداروں پر لازم ہے کہ وہ کشمیر و فلسطین کے بارے میں منظور کی گئی دیرینہ قرار دادوں اور کشمیر ی و فلطینی عوام کی امنگوں کیمطابق اُنکے مسائل حل کروائیں ،کشمیر و فلطین میں جاری بھارتی و اسرائیلی مظالم بند کروائے جائیں،پوری قوم عساکر پاکستان کی پشت پر ایستادہ ہوکیونکہ اندونی دشمن پر قابو پا کر بیرونی دشمن سے نمٹا جا سکتا ہے،جمعہ کو یوم یکجہتی کشمیر کی حکومتی کال پر کشمیرو فلسطین سمیت پوری دنیا ئے مظلومیت کیساتھ اظہار یکجہتی کر کے دنیا پر واضح کیا جائے کہ پوری امت مسلمہ دشمنان اسلام کے مقابلے میں سیسہ پلائی ہوئی دیوار ہے ،مکتب تشیع کی نمائندہ تنظیم تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے پلیٹ فارم سے دین و وطن کے تحفظ ، مظلومین کی حمایت اور ظالمین سے عملی بیزاری کا مشن جاری رکھا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے الحاج غلام مرتضیٰ چوہان کی سر کر دگی میں ٹی این ایف جے راولپنڈی کے عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

آقای موسوی نے باور کرایا کہ فرمان معصوم کی رو سے جو شخص اس حالت میں صبح وشام کرے کہ امور مسلمین کا اہتمام نہ کرے وہ مسلمان کہلانے کا حقدار نہیں ۔انہوں نے کہا کہ کشمیر و فلسطین کے مسائل عرصہ درازسے اقوام متحدہ کی میز پر پڑے ہیں جن کے حل کیلئے متعدد قراردادیں بھی منظور کی گئیں مگر زمیں جند نہ جند گل محمد کے مصداق پرنالہ وہیں پر ہے جہاں پہلے تھاجسکی بنیادی وجہ یہ ہے کہ اقوام متحدہ اپنے چارٹر پر عمل کرنے سے گریزاں ہے نیز عالمی طاقتوں کی خاموشی بھی بھارت کو تقویت پہنچا رہی ہے ۔

آغا سید حامد علی شاہ موسو ی نے کہا کہ فلسطینی و کشمیری بے بہا قربانیاں دے چکے ہیں جو اب بھی جاری ہیں مگر کشمیر و فلسطین لہو لہو ہیں ،فلسطین میں اسرائیل نے مظالم کی تمام حدیں عبور کر لی ہیں اور مقبوضہ کشمیر میں بھارت نے ظلم و بربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کمانڈر مظفر برہان دانی شہادت کے بعد کشمیریوں پر بھارتی فورسزز کے مظالم میں کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے ،سات آٹھ لاکھ بھارتی فوجیوں کو کھلی چھٹی ہے جو سیاہ و سفید کے مالک بنے ہوئے ہیں ، اسرائیل مظالم سے توجہ ہٹانے کیلئے بعض عرب ممالک کو آئے دن نشانہ بناتا رہتا ہے جبکہ بھارت حقائق دنیا کی نظرمیں آنے کے ڈر سے ایل او سی پر مبصرین اور حقوق انسانی کی تنظیموں کو دورہ کرنے کی اجازت نہیں دیتا جو کشمیر میں جاری بھارتی جبر و استبداد پردہ ڈالنے کیلئے پاکستان میں ہونے والی دہشتگردی میں پوری طرح ملوث ہے ،افغانستان میں موجود ڈیڑھ درجن سے زائد بھارتی قونصل خانے دہشتگردی کے اڈے ہیں ۔

آقای موسوی نے واضح کیا کہ پاکستان نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں فرنٹ لائن کا کردار ادا کیا ،نیشنل ایکشن پلان ترتیب دے کر آپریشن ضرب عضب کے ذریعے دہشتگردوں کے بخیے ادھیڑے جبکہ آپریشن ردالفسادجاری ہونے کے باوجود ٹارگٹ کلنگ تھمنے کا نا م نہیں لے رہی ، گزشتہ چند دنوں کے دوران رائے ونڈ ، ڈیرہ اسماعیل خان میں پولیس اہلکاروں اور شہریوں کو نشانہ بنایا گیا جبکہ گزشتہ روز کوئٹہ میں درجن بھر بیگناہ افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا جن میں چار عیسائیوں کے علاوہ ٹی این ایف جے بلوچستان کے کارکن نذر حسین چنگیزی بھی شامل ہیں۔ انہوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ دہشتگردی کی یہ لہر نیشنل ایکشن پلان پر عملد رآمد نہ ہونے ،حکمرانوں ، سیاستدانوں کی جانب سے ایکدوسرے کو زیر کرنے کیلئے باہمی محاذ آرائی اور سیاسی مصلحت پسندی کا نتیجہ ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.