ماہ صیام کے خصوصی پروگراموں میں سیکیورٹی یقینی بنائی جائے ۔ٹی این ایف جے

ولایت نیوز شیئر کریں

ماہ صیام کے خصوصی پروگراموں میںسیکیورٹی یقینی بنائی جائے ۔ٹی این ایف جے
یوم مختارآل محمدؐ ، 15رمضان’’ یوم امن ‘‘شہادت حضرت علی ؑ ’’ ایام عزا‘‘ اورجشن نزول قران  جمعۃ الوداع کومیڈیابھرپورکوریج دے۔ علامہ بشارت امامی  
 مرکزمکتب تشیع کی جانب سے اعلا،ن کردہ پروگرام مذہبی جذبے کیساتھ منعقدہوں گے ۔ ذوالفقارعلی راجہ
 حکومت مسلمہ مکاتب کے عقائد کا احترام کرتے ہوئے بنیادی حقوق کی ادائیگی یقینی بنائے ۔ فیڈرل ایریاکیپٹیل کے ا جلاس سے خطاب

اسلام آباد ( ولایت نیوز)تحریک نفاذ فقہ جعفریہ فیڈرل کیپٹل اسلام آبادکے صدرعلامہ بشارت حسین امامی نے قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کے اعلان کر دہ  ماہ صیام کے پروگراموں میں خصوصی انتظامات اورسیکیورٹی یقینی بنانے کامطالبہ کیاہے ۔

ٹی این ایف جے فیدرل کیپٹیل کے اجلاس سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مرکزمکتب تشیع ٹی این ایف جے کی ہدایت اورحکومتی ایس اوپیزپر عملدرآمدکرتے ہوئے 13رمضان کوشہادت حضرت مختار ثقفی ؒ ،15رمضان عالمی یوم امن بمناسبت ولادت پرنور شہزادہ صلح و امن حضرت امام حسن ؑ جبکہ19تا21رمضان شہادت امیر المومنین حضرت علی ابن ابی طالب ؑ کی مناسبت سے عالمگیر ایام عزا،جشن نزول قرآن ،جمعۃ الوداع یوم القدس حمایت مظلومین اور 8شوال کو عالمگیر یوم انہدام جنت البقیع کے پروگرام حسب سابق مذہبی وقومی جذبے کیساتھ منعقدہوں گے ۔

انہوں نے حکومت پر زوردیا کہ وہ تمام مکاتب فکر کے عقائد و نظریات کا احترام کرتے ہوئے آئینی و بنیادی حقوق کی ادائیگی کو یقینی بنائے تاکہ تمام اہل وطن ملکی ترقی و استحکام ،ازلی دشمن بھارت کی سازشوں کو ناکام کرسکیںاور پاکیزہ ہستیوں سے توسل کرکے ماہِ صیام کی عبادات کے ذریعے کرونا کی وبا سمیت ہر قسم کی آفات و بلیات سے نجات حاصل کی جاسکے۔علامہ امامی نے آقای موسوی کے اس دیرینہ موقف کو دہرایا کہ دہشتگرد کا کوئی مذہب ،مسلک ،ملک اور مکتب نہیں ہوتا وہ فقط دہشت گرد ہے جو انسانیت کے کھلے دشمن ہیں ۔انہوں نے اس عہد کا اعادہ کیا کہ چودہ سو سال سے جاری دہشت گردی کا مقابلہ سینہ سپر ہوکر مظلومیت سے کرتے رہیں گے اور عزاداری سید الشہدا ء امام حسین ؑ کو ہر حال میں جاری و ساری رکھیں گے کیونکہ ہم شجاعت حیدری ،استقامت حسینی اور صبر زین العابدین ؑ کے وارث ہیں۔انہوں نے حکومت سے نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمد کو یقینی بنانے اور کالعدم گروپوں کی نئے ناموں سے سرگرمیوں پر پابندی لگانے کا مطالبہ بھی کیا۔    

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.