بھارتی پائلٹ کورہاکرناعاجلانہ فیصلہ ہے مودی کو جتنا دودھ پلائیں ڈسنے سے بازنہیں آئے گا، قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی 

ولایت نیوز شیئر کریں

بھارتی پائلٹ کورہاکرناعاجلانہ فیصلہ ہے مودی کو جتنا دودھ پلائیں ڈسنے سے بازنہیں آئے گا، قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی

حکومت پاکستان نے روس کی ثالثی قبول توکرلی مگر تاشقندمعاہدے کی طرح دھوکے کاشکارنہ ہوجائے

اسلامی کانفرنس کے وزرائے خارجہ اجلاس میں بھارت کی شرکت قابل مذمت اور پاکستان کو تنہا کرنے کی کوشش ہے

پاکستان کو اوآئی سی اجلاس میں نمائندہ وفد بھیجنا چاہیئے تھا تاکہ بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کیا جاتا

پاک افواج نے بزدل دشمن بھارت کی جارحیت کا ضرب حیدریؑ سے دندان شکن جواب دیا

پاک وہندکشیدگی کااصل سبب مسئلہ کشمیرہے ،عالمی ادارے اگریہ قضیہ حل کراناچاہتے ہیں تومسئلہ کشمیراقوام متحدہ کی قراردادوں اورکشمیریوں کے امنگوں کے مطابق حل کروائیں،کورکمیٹی سے خطاب

اسلام آباد(ولایت نیوز )سرپرست اعلیٰ سپریم شیعہ علماء بورڈ و قائد تحریک نفاذِ فقہ جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ بھارتی وزیر اعظم مودی بھیڑے پررحم کرنامظلوم ریوڑپرظلم کرنے کے مترادف ہے ،پاک افواج کے شیردل جوانوں نے بزدل دشمن بھارت کی تازہ جارحیت کا ضرب حیدریؑ سے دندان شکن جواب دیکرہندوبنیے کے دانت کٹھے کردئیے اورہمیشہ کی طرح اس مرتبہ بھی دفاعی حکمت عملی اپنائی ، بھارتی پائلٹ کورہاکرناعاجلانہ فیصلہ ہے ،مودی وہ اژدھاہے جسے جتنامرضی دودھ پلاؤ ڈسنے سے بازنہیں آئے گا،پاکستان کیخلاف حالیہ بھارتی جارحیت عالمی سرغنے کی ایماپرکی گئی جس کاثبوت امریکہ کی طرف سے اسکی مذمت نہ کرناہے ۔

حکومت پاکستان نے روس کی ثالثی قبول توکرلی ہے مگروہ تاشقندمعاہدے کی طرح دھوکے کاشکارنہ ہوجائے، پاک وہندکشیدگی کااصل سبب مسئلہ کشمیرہے ،عالمی ادارے اگریہ قضیہ حل کراناچاہتے ہیں تومسئلہ کشمیراقوام متحدہ کی قراردادوں اورکشمیریوں کے امنگوں کے مطابق حل کروائیں ، اوآئی سی وزرائے خارجہ کے حالیہ اجلاس میں بھارتی وزیرخارجہ کوکانفرنس کارکن ، مبصراورتنظیم کے مقاصدکاحامی نہ ہونے باوجودموعوکرناقابل مذمت اورچہ معنیٰ دارد؟ بھارتی وزیر اعظم مودی شروع ہی سے پاکستان کو دھمکیاں دے رہا ہے جس نے حالیہ او آئی سی کانفرنس میں بھارتی وزیر خارجہ کو مدعو کروا کر پاکستان کو تنہا کر دیا ہے ، حکومت پاکستان کو مذکورہ کانفرنس میں ایک نمائندہ وفد بھیجنا چاہیئے تھا تاکہ اپنا موقف ببانگ دہل پیش کر کے بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کیا جاتا۔

ان خیالات کااظہارانہوں نے ٹی این ایف جے کی کورکمیٹی کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آقای موسوی نے باورکرایاکہ نہرومسئلہ کشمیرخوداقوام متحدہ لیکرگیاتھا جس کے حل کیلئے ڈیڑھ درجن کے لگ بھگ قراردادیں منظورکرکے کشمیریوں کے استصواب رائے کاحق تسلیم کیاگیامگربھار ت نے مسئلہ کشمیرسے توجہ ہٹانے کیلئے آغازسے لیکرہرحربہ استعمال کیاپاکستان بینے کے بعد آزادکشمیرپر47ء میں حملہ آورہواجب کہ تقسیم ہندکے موقع پر یہ فارمولہ طے کیاگیاتھا کہ مسلم اورہندو اکثریتی علاقوں کے باشندے دونوں نوزائیدہ ممالک میں کسی ایک کیساتھ الحاق کرسکتے ہیں ۔

انہوں نے کہاکہ سرحدی حدبندی کیلئے ریڈکلف کی سربراہی میں کمیشن بنایاگیامگرنہرونے لارڈماؤنٹ بیٹن اورریڈکلف کے گھٹ جوڑ سے سازش تیارکرکے مشرقی پنجاب کااہم ترین مسلم اکثریتی علاقہ جوپاکستان کاجزبن چکاتھااوراس میں پانی کی نہریں اوردریاجاری تھے اورکشمیرمیں داخل ہونے کاواحدراستہ تھابھارتی تسلط میں دیدیا۔ اس موقع پرمسلمانوں کیخلاف بے بہامظالم ڈھائے گئے اوردس لاکھ سے زائد مسلم کاخون بہایاگیاجوبھارت کاپاکستان پرپہلاوارتھا۔

انہوں نے کہاکہ 65ء میں بھارت نے پاکستان کیخلاف جارحیت کی توافواج پاکستان نے اسکے چھکے چھڑادیئے جس کابدل چکانے کیلئے بھارتی خفیہ ایجنسی راکووجوددیاگیا، 71ء میں مشرقی پاکستان کودولخت کیاگیااوراندرگاندھی نے دوقومی نظریہ کوخلیج بنگال میں ڈبونے کی بڑھک ماری اورموجودبھارتی وزیراعظم مودی نے سینہ ٹھوک کر کہہ کہ پاکستان دوٹکڑے کرنے میں ہماراخون بھی شامل ہے ۔ بھارت نے ایٹمی دھماکے کرکے پاکستان کودھمکایامگرجب پاکستان نے اپنے دفاع میں جوہری دھماکے کیے توصہیونی اوراستعماری لابیاں بوکھلااٹھیں اورپوری قوت کیساتھ سرگرم ہوگئیں اورعالمی گھناؤنی سازش کے تحت پاکستان دہشت گردی سے دوچارکردیاگیا۔

قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے کہاکہ اگست 69ء میں مسجداقصیٰ کی آتشزدگی کے بعداوآئی سی کاقیام عمل میں لایاگیاتھاتاکہ یہ پلیٹ فارم مسلم ممالک کے مشترکہ مسائل حل تلاش کرے اورباہمی اخوت کوبڑھاکرعالم اسلام کے بیرونی خطرات کے مقابلے کیلئے لائحہ عمل تیارکیاجاسکے مگریہ عالمی ادارہ مسلمانوں کاایک مسئلہ بھی آج تک حل نہیں کرسکا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.