شرپسندی کو مکتب تشیع کے ساتھ نتھی کرنے کی شر انگیز ی پر ٹی این ایف جے کا شدید احتجاج

ولایت نیوز شیئر کریں

تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کی جانب سے شرپسندی کو مکتب تشیع کے ساتھ نتھی کرنے کی شر انگیز ی پر شدید احتجاج

مرکزی جوائنٹ سیکرٹری ٹی این ایف جے کی جانب سے وزیر اعظم وزیر داخلہ کے نام احتجاجی مراسلے

’ ذمہ دار ترین‘ ادارے کی جانب سے ’غیر ذمہ دارانہ‘ حرکت کا نوٹس لیا جائے

اسلام آباد(ولایت نیوز)تحریک نفاذ فقہ جعفریہ نے وزارت داخلہ کے ایک حالیہ نوٹیفیکیشن میں شرپسندی کو مکتب تشیع ’شیعہ کمیونٹی ‘ کے ساتھ نتھی کرنے کی شدیدمذمت ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان اور وزیرداخلہ شہریار آفریدی کے نام اپنے مراسلہ میں ٹی این ایف جے کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری میجر (ر) باقر بخاری نے کہا ہے کہ وزارت داخلہ کی جانب سے ایسا اقدام شرپسندی کو مزید ہوا دینے کے مترادف اور وطن عزیزکی نظریاتی اساس کو کمزور کرنے کی سوچی سمجھی کوشش ہے۔ قیام پاکستان سے لیکر دفاع وطن کے ہر محاذ بشمول انسداد دہشت گردی کی جنگ میں کسی بھی مسلک سے بڑھ کر قربانیاں دینے والے مکتب تشیع کی تو ہین آئین پاکستان، ملکی وحدت، اخلاقی اقداراور اسلامی تعلیمات کی پامالی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کا شروع دن سے یہ موقف رہا ہے شرپسندوں اور دہشت گردوں کا کوئی مذہب ملک ومسلک نہیں اور ان سے اسی تناظر میں نمٹا جانا چاہئے خواہ وہ کسی بھی بھیس یا بہروپ میں ہوں ۔ٹی این ایف جے رہنما نے مطالبہ کیا کہ ایک’ ذمہ دار ترین‘ ادارے کی جانب سے ’غیر ذمہ دارانہ‘ حرکت کا نوٹس لیا جائے اور اس تو ہین آمیز اور شر انگیز کاروائی کے مرتکب عناصر کے خلاف کاروائی کی جائے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.