تحریک نفاذ فقہ جعفریہ نے بین الاقوامی سازش ناکام کردی معیشت بچاتے ہوئے قومی غیرت کو داؤ پر لگنے سے بچانا ہوگا ، آغا حامد موسوی کا یوم شہدائے حسینی محاذ سے خطاب

ولایت نیوز شیئر کریں

شرق و غرب میں مفادات کا کھیل جاری ہے معیشت بچاتے ہوئے قومی غیرت کو داؤ پر لگنے سے بچانا ہوگا، آغا حامد موسوی

ہر ملک کی اپنی ترجیحا ت ہیں حکومت پھونک پھونک کر قدم رکھے، وطن عزیز قیام سے آج تک دشمنوں کے محاصرے میں ہے

وطن عزیز کو دولخت کرکے نظریہ اساسی کو ڈبونے میں ناکامی پر ضیائی مارشل لا کے ذریعے وطن عزیز کو مسلکی سٹیٹ بنا نے کی سازش کی گئی

تحریک نفاذ فقہ جعفریہ نے بین الاقوامی سازش کو ناکام کیا،صفدر نقوی ،اشرف رضوی اور محمد حسین شاد کی شہادتوں کا پوری قوم پر قرض ہے

حسینی محاذکے ذریعے مذہبی آزادیوں پر حملہ ناکام بنایا میلاد النبی ؐ اور عزااداری کے تحفظ کیلئے قومی جذبہ ہمیشہ یادگار رہے گا ، یوم شہداء پر خطاب

اسلام آباد (ولایت نیوز )سپریم شیعہ علماء بور ڈ کے سرپرست اعلیٰ و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ شرق و غرب کے عالمی سفارتی میدانوں میں مفادات کا کھیل جاری ہے معیشت بچاتے ہوئے قومی غیرت کو داؤ پر لگنے سے بچانا ہوگاقومی مفادات اور غیر جانبدارانہ پالیسی پرہر گز سمجھوتہ نہ کیا جائے، ہر ملک کے اپنے مفادات و ترجیحا ت ہیں حکومت پھونک پھونک کر قدم رکھے ، 7 وطن عزیز اپنے قیام سے لے کر آج تک ازلی دشمن بھارت اور اسکے7 سرپرستوں کے گھیراؤ اور محاصرے میں ہے وطن عزیز کو دولخت کرکے نظریہ اساسی کو ڈبونے میں ناکامی پر ضیائی مارشل لائی حکومت کے ذریعے وطن عزیز کو مسلکی سٹیٹ بنا نے کی سازش کی گئی ، پاکستان کی نظریاتی بنیادیں بچانے کیلئے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ وجود میں آئی جس نے سیکرٹریٹ پر علم لہرا کر اور بعدازاں آٹھ ماہ پرامن ایجی ٹیشن کے ذریعے بین الاقوامی سازش کو ناکام کیا،صفدر نقوی ،اشرف رضوی اور محمد حسین شاد کی شہادتوں کا پوری قوم پر قرض ہے ، حسینی محاذ ایجی ٹیشن کے ذریعے مذہبی آزادیوں پر حملہ ناکام بنایا میلاد النبی ؐ اور عزااداری کے تحفظ کیلئے شہیدوں کی قربانیاں،چودہ ہزار اسیروں کی استقامت اور قومی جذبہ ہمیشہ یادگار رہے گی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم شہدائے حسینی محاذ اور ایام لثارات الحسینؑ کی مناسبت سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس مو قع پر علماء کرام کی کثیر تعدا بھی موجود تھی۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ70کی دہائی میں عالمی سازش کے تحت آمر مطلق نے جمہوریت پر شب خون مارا اور پاکستان کو گروہی و مسلکی اسٹیٹ بنانے کا اعلان کردیا جو علامہ اقبال ،قائد اعظم کے فرمودات سے انحراف اور دو قومی نظریے کو سبوتاژ کرنے کے دیرینہ ایجنڈے کا حصہ تھا،پاکستان کے اساسی نظریے کو پامال کرکے وطن عزیز کے قیام کو غلط ثابت کرنا مہاسبھائی ایجنٹوں کا پرانا خواب تھا اسے لیے جب وطن عزیز کو دولخت کرنے کیے سقوط ڈھاکہ کرایا گیا تو اندرا گاندھی نے یہ شیخی بگھاری تھی کہ دو قومی نظریہ خلیج بنگال میں غرق کردیا ہے لیکن اسکے باوجود جب پاکستان عالمی برادری میں سر اٹھا کر کھڑا ہوگیا ایٹمی پروگرام شروع کردیا گیا تو آمریت کا ڈول ڈال کر ایک نئی سازش کا بیج بویا گیا تاکہ ایک طرف جمہوریت کو پامال کرکے سیاسی نظام کو تباہ کیا جائے اور دوسرا پاکستان کو فرقہ وارانہ اسٹیٹ کی شکل دیکر نہ صرف پاکستان کی بنیادیں کھوکھلی کردی جائیں بلکہ مسلم ممالک کو بھی مسلکی ملک بنا کر باہم لڑا دیا جائے لیکن تحریک نفاذ فقہ جعفریی اور پاکستان کے غیور فرزندوں نے اس سازش کو ملیا میٹ کردیا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ ایک محاذ پر ناکامی کے بعدعالمی طاقتوں نے دہشتگرد تنظیموں کو تخلیق کیا جنہوں نے بالعموم پوری دنیا اور بالخصوص عالم اسلام کاامن تہہ و بالا کرڈالا۔نائن الیون کا ڈرامہ رچا کر پاکستان کو ایک نئی دلدل میں دھکیل دیا گیا اورسترہ سال سے افغانستان ایک بار پھر ٹارگٹ بنا ہوا ہے،عراق کو کھنڈرات میں تبدیل کردیا گیا ہے ،لیبیا کو تہس نہس کردیا گیا اور پٹھو حکمرانوں کے ذریعے مسلم ممالک کو دوسرے ممالک میں مداخلت کرواکے آپس میں الجھا دیا گیا ہے۔یمن،شام ،بحرین میں عالمی سازش اپنا خوب رنگ دکھا رہی ہے پورے عالم اسلام کا امن تہہ و بالا کرنے کا مقصد وحید مشرق وسطیٰ میں اسرائیل اور جنوبی ایشیاء میں ہندو بنیے کا تسلط قائم کرنا ہے اور چین و روس کے خطرات کا تدارک کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ73ء کے آئین کی شق 2کے تحت پاکستان کا سرکاری مذہب اسلام ہے کوئی فرقہ نہیں اور آرٹیکل 227کے تحت قرآن و سنت کی تعبیر وہی ہوگی جو ہر فرقے کے نزدیک مستند ہو، پاکستان تمام مسالک کا گلدستہ ہے جو تمام سازشوں کے باوجود ہمیشہ مہکتا رہے گا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے واضح کیا کہ میلادالنبی ؐ دین کی اساس اورعزادار ی سید الشہداء ؑ دین کا حصار ہے اور ظلم کے خلاف ابدی وسرمدی احتجاج ہے جو اسوقت تک جاری رہیگا جب تک عدل کا بول بالا اور ظلم کا منہ کالا نہ ہوجائے۔

آقائے موسوی نے شہدائے دین و وطن کے درجات کی بلندی کیلئے دعا کی ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.