سعودی عرب فوج بھجوانا دانشمندی نہیں مسلم ممالک کی بھارتی پذیرائی افسوسناک ہے، ،آغا حامد موسوی 

ولایت نیوز شیئر کریں

عرب و ایران کی قربتیں بھارت سے بڑھ چکی ہیں پاکستان تنہا ہورہا ہے خارجہ پالیسی کے تن مردہ میں جان ڈالی جائے
مسلم خواتین حقوق کے حصول کیلئے مغرب کے بجائے خاتون جنت ؑ کی پیروی کریں، عشرہ عزائے فاطمیہ کمیٹی بلوچستان سے خطاب

اسلام آباد( ولایت نیوز) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلیٰ و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ پاکستان اندرونی بیرونی دشمنوں کے گھیراؤ میں ہے ایسے وقت میں پارلیمان کی قرارداد کی خلافورزی کرتے ہوئے سعودی عرب فوج بھجوانا دانشمندی نہیں ہے ،پاکستان نے یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت بنانے کیخلاف اقوام متحدہ میں قرارداد پیش کر کے تمام استعماری قوتوں کی دشمنی مول لی جبکہ فلسطین نے کشمیریوں کے قاتل مودی کو سب سے بڑا اعزا زدے کر اسرائیل کو تقویت بخشی مسلمان دوست دشمن پہچانیں ، عرب و ایران کی قربتیں بھارت سے بڑھ چکی ہیں پاکستان دن بدن تنہا ہوتا جارہا ہے خارجہ پالیسی کے تن مردہ میں جان ڈالی جائے ، عرب و عجم کے مسلم ممالک کی کشمیر کے مسئلے سے بیگانگی اور بھارتی پذیرائی افسوسناک ہے ، پاکستان کو دہشت گردوں کے معاون ملک کے طور پر ایف اے ٹی ایف کی واچ لسٹ میں ڈلوانے کی تحریک افغانستان میں مکمل ناکامی پر امریکی بوکھلاہٹ کا نتیجہ ہے ، حضرت فاطمہ زہراؑ عظمت نسواں کا اسلامی سمبل ہیں مسلم خواتین حقوق کے حصول کیلئے مغرب کے بجائے خاتون جنت ؑ کی پیروی کریں جنہیں رسول کریم ؐ نے عالمین کی عورتوں کی سردار قرار دیا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے عالمی عشرہ عزائے فاطمیہ ؑ کمیٹی بلوچستان کے عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ پاکستان نے عرب اسرائیل جنگ ، خانہ کعبہ پر دہشت گردوں کے قبضے ، خلیجی ریاستوں کی تعمیر و ترقی سمیت ہر مشکل مرحلے پر عربوں اور بالخصوص سعودی عرب کی مدد کی لیکن بدقسمتی سے تمام عرب ریاستیں ہمیشہ بھارت کو ہی ترجیح دیتی رہیں ، فلسطین سے پہلے سعودی عرب بھی بھارت کو سب سے بڑے ریاستی اعزاز سے نواز چکا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مسلم حکمران بالعموم اور عرب حکمران بالخصوص آج تک دوست دشمن کی تمیز نہیں کرسکے۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ شیطانی لابیاں عالم اسلام کے خلاف گھناؤنا کھیل کھیل رہی ہیں دوسری جنگ عظیم کے بعد جہاں اقوام متحدہ وجود میں آئی وہاں امریکہ بھی سامراج کے نئے روپ کے طور پر سامنے آگیااور نو آبادیاتی نظام سے چھٹکارا پانے والی تمام ریاستوں میں تسلط جمانے کیلئے مداخلت کرنے لگاکئی ملکوں میں منہ کی کھائی لیکن باز نہ آیا پاکستان بھی اپنے قیام کے پہلے دن سے آج تک امریکی مداخلت کا شکار ہے امریکہ نے عراق سے ایران پر حملہ کروایا، عراق کو کویت میں گھسایا اور پھر یہی بہانہ بنا کر تمام خلیجی عرب ریاستوں میں مداخلت کا جواز ڈھونڈ لیا،داعش کو تخلیق کیا اور اسے کچلنے کے بہانے عراق شام میں ڈیرے ڈال لئے ۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ نے نائن الیون کا بہانہ بنا کر افغانستان میں دوبارہ مداخلت کی لیکن 17سال سے مکمل ناکام ہے وہ اپنی ناکامی کا بدلہ پاکستان سے لینا چاہتا ہے اور پاکستان پر متواتر الزامات عائد کررہا ہے ۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا پاکستان پر دہشت گردوں سے نرمی سے پیش آنے لے الزاما ت لگانے والا امریکہ شام ،لیبیا، افغانستان میں عالمی دہشت گردوں کی سر پرستی کررہا ہے امریکہ کو دراصل پاکستان کے پرامن ایٹمی و میزائیل پروگرام سے شدید تکلیف ہے اور خود دیگراں را نصیحت خود رافصیحت کے مصداق نئے نئے تجربے کررہا ہے بھارت و اسرائیل کو اسلحے کے انبار دے رہا ہے وہاں استعماری سرغنہ اندھا بناہوا ہے ۔انہوں نے کہا کہ امریکہ اپنی ایندھن کی ضروریات پوری کر نے کیلئے دنیا بھر کے معدنی وسائل پر قبضے کیلئے دیوانہ ہوا جا رہا ہے ، عربوں کی پشت پر اسرائیل کی صورت خنجر گھونپنے کا مقصد عرب وسائل پر قبضہ کرنا تھااور آج عین استعماری منصوبے کے مطابق اسرائیل کے سامنے دو درجن عرب ممالک بھیگی بلی بنے ہوئے ہیں ۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے واضح کیا کہ مسلم دنیا جان لے امریکہ اسرائیل و بھارت کا ایجنڈا یک ہے امریکہ اسرائیل کو مشرق وسطی اور بھارت کو جنوبی ایشیا کا چوہدری بنا نا چاہتا ہے ، پاکستا ن بھارتی چوہدراہٹ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے اسی لئے شیطانی ثلاثہ کو بری طرح کھٹکتا ہے ، مسلم ممالک کی سرخروئی اغیار کے ایجنڈے پر چلنے میں نہیں باہمی اتحاد میں پوشیدہ ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.