نیمہ شعبان: عقیدہ ختم نبوت پر سمجھوتہ ناممکن، پاکستان نظام مصطفیؐ بہ انتظامِ مرتضیٰ کے لیے معرضِ وجود میں آیا،علامہ آغا سید مقدسی

ولایت نیوز شیئر کریں

عقیدہ ختمِ نبوت اسلام کا مضبوط قلعہ ہے، قرآن و حدیث سے متصادم کوئی فیصلہ قبول نہیں کریں گے۔ علامہ حسین مقدسی
پاکستان نظامِ مصطفیٰ بہ انتظامِ مرتضیٰ کے لیے معرضِ وجود میں آیا۔ علامہ آغا سید مقدسی
سیاسی و مقتدر قوتیں اپنی توانائیاں معیشت سنبھالنے اور عوامی مسائل کے حل کے لیے استعمال کریں،باہمی دست وگریبان ہونے سے گریز کیا جائے۔ آقائے مقدسی
قیام مہدی ؑ موعود معرکہ حق و باطل اور خیر و شر کے درمیان آخری کڑی ہوگی ۔ علامہ آغاسیدحسین مقدسی
قائدملت جعفریہ آغاحامد موسویؒ کے پیغام امن و محبت کو عام کرکے دشمنان اسلام و پاکستان کی سازشوں کو ناکام بنادیا جائے گا
قیام مہدی ہرقسم کے ظلم و بربریت کا انہدام ہوگا۔ سربراہ ٹی این ایف جے کاراول جھیل کے کنارے یوم عدل کے عظیم الشان جلسے سے خطاب
نیمہ شعبان کو تمام شیعہ مساجد امام بارگاہوں میں شب بیداری، خصوصی اعمال و عبادات و زیارت امام حسین ؑ کی تلاوت،محافل میلاد کا انعقاد

اسلام آباد (ولایت نیوز ) تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کی کال پر سوموار 15 شعبان کو ملک بھر میں حضرت امام مہدی آخر الزمان علیہ السلام کے ظہور کی مناسبت سے ’یوم عدل‘ منایاگیا اس موقع پر تمام چھوٹے بڑے شہروں میں محافل میلاد کا انعقاد کیا گیاشب برات نیمہ شعبان کو تمام شیعہ مساجد امام بارگاہوں میں شب بیداری اور اجتماعی اعمال،دعائیں کی گئیں۔ بوقت سحر دریاؤں جھیلوں سمندر میں عریضہ حاجات سپرد آب کئے گئے۔ محافل میلادسے خطاب کرتے ہوئے علماء و ذاکرین نے فلسفہ ظہور مہدی موعود پر روشنی ڈالی۔

اس موقع پر حضرت امامِ مہدی کے ظہور میں تعجیل اور عالم اسلام وپاکستان سمیت پوری انسانیت کے مصائب و آلام کے خاتمہ کیلئے دعائیں کی گئیں اورمظلومین فلسطین و کشمیر کیساتھ اظہار یکجہتی کیا گیا۔ ٹی این ایف جے اسلام آباد کے زیراہتمام عظیم الشان جشن قائم آل محمدؐ سےخطاب کرتے ہوئے سربراہ تحریک نفاذ فقہ جعفریہ پاکستان علامہ آغاسیدحسین مقدسی نےباور کرایا کہ عقیدۂ ختمِ نبوت اسلام کا مضبوط قلعہ ہے،قرآن و حدیث سے متصادم کوئی فیصلہ قبول نہیں کریں گے، محافظِ ختمِ نبوت علامہ محمد اسمعیل علیہ الرحمہ کے وارث ہیں جنہوں نے ختم نبوت کے عقیدے کے تحفظ کیلئے پارلیمان میں تاریخی کردار ادا کیا، پاکستان نظامِ مصطفیٰ بہ انتظامِ مرتضیٰ کے لیے معرضِ وجود میں آیا، سیاسی و مقتدر قوتیں اپنی توانائیاں معیشت سنبھالنے اور عوامی مسائل کے حل کے لیے استعمال کریں،باہمی دست وگریبان ہونے سے گریز کیا جائے۔

راول ڈیم میں جشنِ نیمہ شعبان سے خطاب کرتے ہوئے علامہ مقدسی نےاس عزم کا اعادہ کیا کہ راہ حسینی پر گامزن رہتے ہوئے قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کے پیغام امن و محبت کو عام کرکےدشمنانِ اسلام و پاکستان کی سازشوں کو ناکام بنادیا جائے گا، دہشت گردی کے خاتمے کیلئے خلوص دل سے نیشنل ایکشن پلان پرعمل کیاجائے ۔انہوں نے کہا کہ تمام قومی ادارے آپس میں ہم آہنگ ہو کر دہشت گردی کے خاتمے کو تمام مسائل پر اولین ترجیح دیں پوری قوم ان کے ساتھ ہے۔ آغا مقدسی نے کہا کہ حکومت سازی کے مراحل میں دانشمندی و وسعتِ قلبی سے کام لیا جائے۔ علامہ حسین مقدسی نے باور کرایا کہ قیام مہدی ؑ موعود معرکہ حق و باطل اور خیر و شر کے درمیان آخری کڑی ہوگی ۔انہوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ ظہورِامام مہدی ؑ دنیائے مظلومیت پر احسان عظیم اور حکومت الہیہ کے وارث ہونے کا دیباچہ ہوگا۔حدیث رسولؐ ہے کہ امام مہدی ؑ و ہ ہستی ہیں جن کے ذریعے خداوند عالم زمین کو عدل و انصاف سے بھر دیگا جو پہلے ظلم و جور سے بھری ہوگی۔معلوم ہوا کہ قیام مہدی کا مقصد عظیم عدل و انصاف کا قیام ہرقسم کے ظلم و بربریت کا انہدام ہوگا۔آپ کے ظہور کے ساتھ ہی دنیا میں ہر سو عدل و انصاف نظر آئیگا ،ہر قسم کے ظلم و بربریت‘جبرواستبداد‘ کا خاتمہ اور پرچم عدل و انصاف لہرائے گا۔چنانچہ امام کا فرمان ہے کہ میرے ظہور میں تعجیل کیلئے دعا کرو کیونکہ تمھاری کامیابی اسی میں مضمرہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.