پیروکاران موسویؒ کے خمیر میں کیا شامل ہے ؟ تحفظ نظریہ کانفرنس میں علامہ حسین مقدسی نے راز کھول دیا

ولایت نیوز شیئر کریں

افواج پاکستان کی توہین کے پیچھے غیر ملکی ایجنڈا کارفرما ہے،حکومت آئی ایم ایف کا پیچھا چھوڑ دے، سربراہ تحریک نفاذ فقہ جعفریہ علامہ حسین مقدسی
معیشت اور قومی وقار بچانے کیلئے شعب ابی طالب ؑ کی راہ اختیار کرنا ہوگی، عقیدہ اور وطن سے محبت پیروکاران موسویؒ کے خمیر میں شامل ہے
کالعدم تنظیموں کو ریلیف کی خبریں تشویش ناک ہیں ملکی سا لمیت و یکجہتی کیلئے مضرپنڈورا باکس کھولنے سے گریز کیا جائے،شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہ کی جائیں
حسینی محاذ ایجی ٹیشن نہ کیا جاتا تونظریہ پاکستان پر مہلک وار کامیاب ہو جاتا، موسوی جونیجو معاہدہ بانیان پاکستان کے تصور کا آئینہ دار اور مذہبی آزادیوں کا ضامن ہے
اسلامی ممالک کے بڑھتے تعلقات سے شیطانی طاقتیں مضطرب ہیں،سانحہ پاراچنار کے مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے، ملک میں کوئی شیعہ سنی لڑائی نہیں نہ کبھی ہونے دیں گے
تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سینے پر’تحفظ نظریہ پاکستان‘ کا تمغہ سجا ہیحضرت زہرا و زینب ؑ اور حضرت معصومہ ؑ جیسی بیٹیوں کی قربانیوں سے اسلام کو جاودانی ملی
یوم نگہبان رسالت ؐ یوم عظمت نسواں اور موسوی جونیجو معاہدے کی سالگرہ کے موقع پر ’تحفظ نظریہ کانفرنس‘سے علماء و عہدیداران تحریک کا خطاب، تمام شہروں میں تقاریب

اسلام آباد (ولایت نیوز ) تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ علامہ آغا سید حسین مقدسی نے کہا ہے کہ افواج پاکستان کی توہین کے پیچھے غیر ملکی ایجنڈا کارفرما ہے ذات جماعت کے بجائے قومی مفادات کو ترجیح دینا ہوگی، حکومت آئی ایم ایف کا پیچھا چھوڑ دے معیشت اور قومی وقار بچانے کیلئے شعب ابی طالب ؑ کی راہ اختیار کرنا ہوگی، عقیدہ اور وطن سے محبت پیروکاران موسوی کے خمیر میں شامل ہے کسی طاقت کو پاکستان کی نظریاتی بنیادیں کھوکھلی نہیں کرنے دیں گے، کالعدم تنظیموں کو ریلیف دینے کی خبریں تشویش ناک ہیں ملکی سالمیت و یکجہتی کیلئے مضرو پنڈورا باکس کھولنے سے گریز کیا جائے شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہ کی جائیں، اسلامی ممالک کے بڑھتے ہوئے تعلقات سے شیطانی طاقتیں مضطرب ہیں، تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سینے پر سجا تحفظ نظریہ کا تمغہ ہمیشہ باعث افتخار رہے گا، کراچی ٹارگٹ کلنگ میں کالعدم جماعتوں کی باقیات ملوث ہیں حسینی محاذ ایجی ٹیشن نہ کیا جاتا تونظریہ پاکستان پر مہلک وار کامیاب ہو جاتا، موسوی جونیجو معاہدہ بانیان پاکستان کے تصور کا آئینہ دار اور مذہبی آزادیوں کا ضامن ہے، سانحہ پاراچنار کے مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے پاکستان میں کوئی شیعہ سنی لڑائی نہیں نہ ہونے دیں گے، حضرت فاطمہ زہرا ؑ حضرت زینب ؑ اور حضرت معصومہ ؑ جیسی بیٹیوں کی قربانیوں کے سبب دین اسلام کے پیغام کو جاودانی حاصل ہوئی، مضبوط پاکستان کیلئے تمام مکاتب کے حقوق کی برابر کی سطح پر ادائیگی یقینی بناناہوگی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں حسینی محاذ کے پرامن ایجی ٹیشن کے نتیجے 21مئی85ء کو جونیجو حکومت اورٹی این ایف جے کے درمیان طے پانے والے موسوی جونیجو معاہدے کی منظوری کے38 سال مکمل ہونے اور یوم نگہبان رسالت و یوم عظمت نسواں کی مناسبت سے عزاخانہ معصومہ قمؑ میں منعقدہ ”تحفظ نظریہ کانفرنس“ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

????????????????????????????????????

علامہ مقدسی نے کہا کہ ازلی دشمن بھارت کیلئے پاکستان کا وجود ناقابل برداشت ہے گذشتہ 76سالہ تاریخ گواہ ہے کہ دشمن نے پاکستان کو صفحہ ہستی سے مٹانے کیلئے ہر حربہ اور ہتھکنڈا اختیار کیا آج بھی دشمن قوم میں تفریق ڈال کر نظریہ پاکستان کو باطل ثابت کرنا چاہتا ہے لیکن یہ بات بھی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں کہ ہر سازش اور حملے کے بعد دوقومی نظریہ مزید نکھرا۔

علامہ حسین مقدسی نے کہا کہ حسینی محاذ ایجی ٹیشن پرامن جدوجہد کا بے مثال درس ہے، حسینی محاذبرائے شیعہ مطالبات کے آٹھ ماہ پر مشتمل ملکی تاریخ کے سب سے بڑے پر امن ایجی ٹیشن میں 14ہزارشیعہ سنی برادران کے علاوہ 8عیسائیوں نے بھی رضاکارانہ گرفتاری پیش کیں لیکن نہ کسی شہری کی ریڑھی الٹی گئی اورنہ کوئی دکان جلائی گئی مکتب تشیع میں بے چینی کے خاتمے کیلئے21مئی 85ء کے جونیجو موسوی معاہدے کی تمام شقوں پر عمل کیاجائے۔انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ کہ میلادالنبی و عزاداری دین مصطفیؐ کی روح ہیں،ہم زندگی جان مال سب قربان کرسکتے ہیں لیکن دین و شریعت کی روح سلب نہیں ہونے دیں گے۔

تحفظ نظریہ کانفرنس سے علامہ بشارت امامی، علامہ قمر زیدی، علامہ شبیہہ الحسن کاظمی، مفتی باسم زاہری، بو علی مہدی،حسن کاظمی،عمار یاسر علوی، علامہ اجلال حیدر، علی اجود نقوی،محمد عباس کاظمی، پروفیسر ثمر الحسن، حاجی مختار شاہ، علاحیدر، شوکت عباس جعفری، ذوالفقار علی راجہ ، ذاکر مطیع الحسن، ذاکر امجد کاظمی، عماد علی جعفری اور دیگر مقررین نے خطاب کیا۔ اس موقع پر منظور کردہ قرار داد میں واضح کیا گیا کہ اسلام و پاکستان کے نظریہ کے تحفظ کیلئے سیرت ابو طالبؑ و کریمہ اہلبیت ؑ پر چلتے ہوئے عملی جدوجہدامانت ودیانت کیساتھ جاری رہے گی اوروطن عزیز کے اتحاد و یکجہتی اور اپنے عقائد و حقوق کے بارے میں نہ پہلے سودا بازی کی نہ ہی کسی کوکرنے دی جائے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.