زائرین کوحبسِ بے جا میں رکھنے کا سلسلہ بندکیا جائے مجرمانہ اقدامات نہ رکے تو دنیا ہماری طاقت دیکھ لے گی، تحریک نفاذ فقہ جعفریہ

ولایت نیوز شیئر کریں

زائرین ِحسین ؑ کو غیر ضروری قرنطینہ کے بہانے حبسِ بے جا میںرکھنے کا سلسلہ فوری طور پر بندکیا جائے
این سی او سی کے نام پر محبانِ محمدؐ و آل محمدؐ کے خلاف کریک ڈائون بند نہ ہوا تو دنیا ہماری طاقت دیکھے گی۔حسن کاظمی
مذہبی پروگراموں پر بے جاپابندیوں اور آئینی حقوق کی پامالی کے مجرمانہ احکامات کو جوتی کی نوک پر رکھتے ہیں
زیارات کے دوران غیر معمولی عزت پانیوالے پاکستانی زائرین سے اپنے وطن میں مجرموں جیسا سلوک شرمناک ہے
مذہب سے عاجز و عاری اربابِ اختیار اپنی لادینیت کو خود تک محدود رکھیں، پوری قوم پر مسلط کرنے کی کوشش نہ کریں
حکومت ہو یا ناجائز احکامات ،ہمارے ٹھکرانے کے بعد کہیں دکھائی نہیں دیں گے۔سیکرٹری تعلقات عامہ تحریک نفاذ فقہ جعفریہ

اسلام آباد (ولایت نیوز ) تحریک نفاذ فقہ جعفریہ پاکستان کے سیکرٹری تعلقاتِ عامہ حسن کاظمی نے کہا ہے کہ عراق و ایران میں آلِ ؑ رسولؐ کے مزارات ِ مقدسہ کی زیارات کر کے واپس وطن پنہچنے والے زائرین کی بلا جواز قرنطینہ پابندی اور انکے ساتھ روا رکھا جانیوالا امتیازی سلوک سراسر زیادتی اور غیر قانونی اقدام ہے، حکومت ہوش کے ناخن لے اور زائرین کو حبسِ بے جا میں رکھنے کا سلسلہ فوری طور پربند کیا جائے۔ این سی او سی کے نام پر مذہبی پروگراموں پر پابندیاں عائد کرنے اور آئین میں درج مذہبی حقوق کو پامال کرنے والے حکومتی احکامات کو جوتی کی نوک پر رکھتے ہیں۔

انہوں نے واضح کیا کہ اگر محبانِ محمدؐ وآلِ محمدؐ کے خلاف جاری کریک ڈائون بند نہ کیا گیا تو سب ہماری طاقت دیکھیں گے۔ کوئی حکومت ہو یا اسکے نا جائز احکامات ، ہمارے ٹھکرانے کے بعد کہیں نظر نہیں آئیں گے۔ قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے متنبہ کیا تھا کہ آفات وبلیات اور وباء و امراض کے خلاف مذہب کو اپنی طاقت بنایا جائے ،تاہم گذشتہ دو سال سے این سی او سی کی جانب سے کورونا وباء کے بجائے مذہب کو ہی نشانہ بنایا جاتا رہا ہے ۔حکومتی اجلاسوں، سیاسی جلسوں ، بازاروں ، مارکیٹوں سمیت کہیں بھی کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد نظر نہیں آتا جبکہ تمام پابندیوں کا نشانہ صرف مذہبی عبادات کو بنا یا جارہاہے، اگر اربابِ اختیار مذہب سے اس قدر عاجز و عاری ہو چکے ہیں تو اپنی لادینیت اپنے تک محدود رکھیں،اسے قوم پر مسلط کرنے کی کوشش نہ کریں۔

حسن کاظمی نے کہا کہ وطنِ عزیز پاکستان اسلام کے نام پر وجود میں آیا تھا اور اسلام کے نام پر ہی قائم رہے گا۔ملک کو لادینیت کی طرف لے جانیوالے ہر اقدام کا کھل کر مقابلہ کیا جائے گا۔ انتہائی دکھ اور شرم کا مقام ہے کہ عراق میں غیر معمولی عزت و تکریم پانے والے پاکستانی زائرین جب اپنے وطن واپس پنہچتے ہیں تو انہیں خواتین و بچوں سمیت مجرموں کی طرح حراست میں لے کر بلاوجہ قرنطینہ میں قید کیا جارہا ہے جبکہ ان سے قرنظینہ کی اجرت و کرایہ علیحدہ لیا جارہا ہے ۔دنیا ایسی قوم کو کبھی عزت نہیں دیتی جو خود اپنی عزت نہیں کرتی۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ وزیر اعظم پاکستان معاملات کا فوری نوٹس لیتے ہوئے مسائل کے حل کیلئے اقدامات یقینی بنائیںکیونکہ اندرونی و بیرونی دشمنوں میں گھرا ہواپاکستان انصاف شکن پالیسیوں کا متحمل نہیں ہو سکتا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.