منظم سازش کے تحت شیعہ عبادات کو نشانہ بنایا جا رہا ہے صدر وزیر اعظم چیف جسٹس نوٹس لیں، شیعہ آئمہ مساجد

ولایت نیوز شیئر کریں

منظم سازش کے تحت شیعہ عبادات کو نشانہ بنایا جا رہا ہے صدر وزیر اعظم چیف جسٹس نوٹس لیں، تنظیم شیعہ آئمہ مساجد
وطن کی تشکیل دفاع اور ترقی میں برابر کا حصہ ہے مکتب تشیع کو دیوار سے لگانے کی کوششیں کرنے والے پاکستان کی یکجہتی اور سا لمیت سے کھیل رہے ہیں
پورے پاکستان نے حضرت عمر بن عبد العزیز کے مزار پر حملہ کے خلاف احتجاج کیا ،اہل تشیع کے احتجاج پرسنگین مقدمات قائم کردیئے گئے
جھنگ میں عزاداروں پر بربریت کی انتہا کی گئی خواتین کی توہین کی گئی، انسانی حقوق تنظیمیں کیوں خاموش ہیں
کالعدم جماعتوں سے منسلک کالی بھیڑوں کی ایما پر لائسنسی و روایتی جلوس و مجالس پر ایف آئی آرز درج کردی گئی، علامہ تصور نقوی کا ہنگامی اجلاس سے خطاب

اسلام آباد( ولایت نیوز)تنظیم شیعہ آئمہ مساجد کا ہنگامی اجلاس حجۃ الاسلام و المسلمین علامہ تصور نقوی کی زیر صدارت الکاظم اسلام آباد میں منعقد ہوا جس میں مکتب تشیع اور عزاداروں کے خلاف ہونے والی زیادتیوں کی پرزور مذمت کی گئی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ تصور حسین نقوی نے کہا کہ وزیر اعظم واشگاف اعلان کرچکے ہیں کہ کورونا کے پھیلاؤ کا مساجد اور مذہبی تقریبات سے کوئی تعلق نہیں لیکن ایک منظم سازش کے تحت رمضان کے بعد شوال میں بھی انتظامیہ کی جانب سے شیعہ عبادات کو نشانہ بنایا گیا،کالعدم جماعتوں سے دوستیاں رکھنے والی انتظامی کالی بھیڑوں کے ایما پر شہادت علیؑ کے بعد اب شہادت امام جعفر صادق ؑ کے لائسنسی و روایتی جلوس و مجالس کی پاداش میں عزاداروں پر ایف آئی آرز درج کی جارہی ہیں ، جھنگ میں پولیس کی جانب سے 18جیٹھ کے جلوس میں عزاداروں پر بربریت کی انتہا کی گئی خواتین کی توہین کی گئی، انسانی حقوق تنظیمیں کیوں خاموش ہیں۔

علامہ تصورنقوی نے کہا کہ گذشتہ جمعہ کو پاکستان کی تمام شیعہ سنی تنظیموں نے حضرت عمر بن عبد العزیز کے مزار پر حملہ کے خلاف احتجاج کیا لیکن حجاز و عراق شام میں مزارات کی توہین کے خلاف جب چکوال میں مکتب تشیع کی نمائندہ تنظیم تحریک نفاذ فقہ جعفریہ نے احتجاجی جلوس نکالاتو ان پر سنگین مقدمات قائم کردیئے گئے، بعض عزاداروں کو گرفتار کیا گیااور شرکائے جلوس کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دی گئیں۔

علامہ تصور نقوی نے کہا کہ مکتب تشیع کا پاکستان کی تشکیل دفاع اور ترقی میں برابر کا حصہ ہے مکتب تشیع کو دیوار سے لگانے کی کوششیں کرنے والے پاکستان کی یکجہتی اور سا لمیت سے کھیل رہے ہیں صدر وزیر اعظم چیف جسٹس نوٹس لیں۔اجلاس سے علامہ علی زیدی، علامہ حسین گردیزی، علامہ حسین قمی، علامہ جعفر زیدی نے بھی خطاب کیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.