جنت البقیع گرانے کے مرکزی کردار برطانیہ و آل سعود!سعودی ایمبسی لندن کے سامنے ٹی این ایف جے کا زبردست ماتمی احتجاج

ولایت نیوز شیئر کریں

جنت البقیع گرانے کے مرکزی کردار برطانیہ و آل سعود !سعودی ایمبسی لندن کے سامنے ٹی این ایف جے کا زبردست ماتمی احتجاج

اس بے مثل احتجاج میں بنت نبیؐ محرومہ فدک  سیدہ زہرا ؑسے عقیدت سے سرشار اور آل محمد ؐ کے مصائب سے دل گرفتہ عزاداروں کے احتجاجی نعرے  ، غم ناک نوحے  اور ظالمین کے دلوں میں زلزلہ پیدا کرتی ماتمی گونج روحانیت و مظومیت کا عجیب منظر پیش کرتے ہیں

ایسے موقع پر جب برطانیہ میں ورلڈ کپ کرکٹ میچ جاری تھا چنے ہوئے عاشقان جنت البقیع کے احتجاج نے پردرد سماں باندھ رکھا تھا

لندن (ولایت نیوز رپورٹ علی زین ۔ تصاویر ناعم عباس ، ٹی این ایف جے یوکے) ایک صدی پہلے برطانیہ ہی وہ مرکزی کردار تھا جس نے سلطنت عثمانیہ کو توڑ کر حجاز میں آل سعود کو مسلط کیا اور مسلمانوں کو  جنت البقیع و جنت المعلی سمیت ان کے مقدس ترین مقامات سے محروم کرنے کی بنیاد رکھی گئی ۔ انہدام جنت البقیع کے شرمناک ظلم کے خلاف احتجاج کیلئے ٹی این ایف جے یوکے کی جانب سے برطانیہ میں سعودی ایمبیسی کے سامنے زبر دست احتجاج کیا گیا۔

قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کا فرمان ہے کہ عزاداری سید الشہداء امام حسین ؑ کائنات کا پرامن و موثر ترین احتجاج ہے جس سے دنیا کا ہر ظالم خوفزدہ ہے ظالمین کو بے نقاب کرنے کیلئے یہ مظلومین کا سب سے بڑا ہتھیار ہے ۔ اسی فرمان کو سامنے رکھتے ہوئے ٹی این ایف جے برطانیہ ایک طویل عرصے سے برطانیہ کی سعودی ایمبیسی کے سامنے ماتمی احتجاج کرتی ہے ۔ اور سازش کے بنیادی مراکز کے سامنے دنیا بھر کے مسلمانوں کا احتجاج ریکار ڈ کرتی ہے ۔

یہ منفرد ماتمی احتجاج عزاداروں کیلئے بے پایاں کشش رکھتا ہے لہذا کئی کئی گھنٹوں کا سفر کرکے عزادار برطا نیہ کے اس بے نظیر احتجاج اور پرسے میں شریک ہوتے ہیں ۔

اس بے مثل احتجاج میں بنت نبیؐ محرومہ فدک سیدہ فاطمۃ زہرا ؑسے عقیدت سے سرشار اور آل محمد ؐ کے مصائب سے دل گرفتہ عزاداروں کے احتجاجی نعرے  ، غم ناک نوحے اور ظالمین کے دلوں میں زلزلہ پیدا کرتی ماتمی گونج روحانیت اور مظومیت کا عجیب منظر پیش کرتے ہیں ۔

اس سال یہ احتجاج 8 شوال کے بعد آنے والے پہلے اتوار  16جون کو دن ایک بجے سعودی ایمبیسی کے سامنے منعقد ہواجس میں عاشقان رسالت ؐ و اہلبیت ؑ نے بھرپور شرکت کی ۔ ایسے موقع پر جب برطانیہ میں ورلڈ کپ کرکٹ میچ جاری تھا چنے ہوئے عاشقان جنت البقیع کے احتجاج نے پردرد سماں باندھ رکھا تھا۔

احتجاج کا آغاز ا دن ایک بجے حتجاجی ماتمی جلسے سے ہوا جس سے علامہ قاسم عباس زیدی ، ذاکر سید صفدر عباس جعفری، ذاکر غلام رضا صائب ، ذاکر اہلبیت ساجد محسن کاظمی ، سید حسن نقوی ، سید حسن بخاری ، سیدقمر کاظمی ایڈووکیٹ و برادران ، حسن شیخ نے خطاب کیا ۔

اس کے بعد ماتمی احتجاج کیا گیا جس میں قریشی پارٹی ۤف بریڈ فورڈ، ساجد پارٹی آف بریڈ فورڈ ، ساجد پارٹی ، لندن سلاؤ پارٹی اور مرکزی نوحہ خوان سنگت لندن نے نوحہ خوانی و ماتمداری کی اس کے علاوہ برطانیہ بھر کے تمام علاقوں سے ماتمی عزاداروں نے شرکت کی ۔ احتجاج میں اہلسنت برادران کی بھی کثیر تعداد موجود تھی۔

شرکائے احتجاج نے مختلف بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جس میں جنت البقیع گرائے جانے کے شرمناک اقدام کی مذمت، بڑ ی طاقتوں و عالمی اداروں کی منافقت کے خلاف اور مقامات مقدسہ کی بحالی کے نعرے درج تھے ۔

مظاہرے میں  کم سن بچے بھی جو ش و ولولہ کے ساتھ نعرے لگاتے رہے باحجاب مستورات کی بھی بڑی تعداد ماتمی احتجاج میں شامل رہی ۔

اس سال ماتم کے دورانیے اور شرکاء کی تعداد میں اضافہ دیکھنے میں آیا ۔  جنت البقیع کیلئے سوگوار ماتمیوں کی تڑپ دیدنی تھی ۔ پروگرام آرگنائزرز نے بمشکل احتجاج کو طے شدہ وقت کے اندر مکمل کیا۔

اختتامی دعا مولا نا قاضی غلام عباس حیدری آف ڈربی نے کروائی ۔ عزاداروں نے اشکوں سے منور آنکھوں کے ساتھ جنت البقیع کی بحالی ،فرزند زہرا ؑامام عصرؑ کے ظہور میں تعجیل اور امت مسلمہ کے مصائب کے خاتمہ کیلئے دعائیں کیں۔

پروگرام کے انعقاد میں عدنان کیانی برمنگھم ، شیخ اعجاز، برادر عرفان علی ڈار، سید ساجد محسن کاظمی ، سید حیدر زیدی ، سید مجاہد حسین ، برادر ظہیر احمد بقیعی ، برادر ثاقب ، منورکاظمی سمیت لاتعداد  محبان اہلبیتؑ  نے پروگرام میں فعال کردار ادا کیا۔ سید شبیر نقوی اور اصغر ڈار نے سوشل میڈیا کے ذریعے پروگرا م کو براہ راست دنیا بھر میں نشر کرنے میں نمایاں کردار کیا۔

پروگرام کے چیف آرگنائزر ڈاکٹر زاہد حسین نقوی نے تمام شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔

جنت البقیع گرانے کے مرکزی کردار برطانیہ و آل سعود!سعودی ایمبسی لندن کے سامنے ٹی این ایف جے کا زبردست ماتمی احتجاج
جنت البقیع گرانے کے مرکزی کردار برطانیہ و آل سعود!سعودی ایمبسی لندن کے سامنے ٹی این ایف جے کا زبردست ماتمی احتجاج

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.