علامہ وقار تقوی وادی حسین میں سپردخاک، نماز جنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت؛ رحلت ناقابل تلافی نقصان ہے،آقائے موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

علامہ وقار تقوی وادی حسین میں سپردخاک، نماز جنازہ قائد ملت جعفریہ کے نمائندہ خصوصی علامہ محسن الحسینی کی اقتدا میں ادا کی گئی

آخری رسومات میں سندھ بھر سے تنظیمی کارکنوں، علماء ، ذاکرین ، شعراء ، ماتمی عزاداروں سمیت ہزاروں افراد کی شرکت

علامہ وقار تقوی دہشت گردی اور بدامنی کے بدترین حالات میں بھی امن و محبت کی آواز بن کر زندہ رہے، رحلت ناقابل تلافی نقصا ن ہے ، قائد ملت جعفریہ آقائے موسوی کا تعزیتی پیغام

ٹی این ایف جے عزاداری سیل کے کنوینر کی حیثیت سے عزاداری میں درپیش رکاوٹوں کو دور کرنے میں ہمیشہ مصروف عمل رہے

کراچی(ولایت نیوز) مشن ولا و عزا کے سپاہیوں کا وقار دین و وطن کے وفادار تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے صوبائی صدر علامہ وقار حسن تقوی کو وادی حسین ؑ کراچی میں ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں سپردخاک کردیا گیا۔ مرحوم کی نماز جنازہ  امام بارگاہ شہدائے کربلا  انچولی میں بعد از نماز مغربین ادا کی گئی جس میں سندھ بھر سے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ و ذیلی تنظیموں کے کارکنوں ،علمائے کرام ، ذاکرین ، کراچی کی تمام مذہبی ماتمی تنظیموں کے رہنماؤں ، ماتمی عزاداروں ، شعراء سمیت زندگی کے مختلف شعبہ جات سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی ۔ نماز جنازہ  قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کے نمائندہ خصوصی علامہ سیدمحسن الحسینی کی اقتداء میں ادا کی گئی ۔

جنازہ سے قبل عمار یاسر علوی نے علامہ وقار حسن تقوی کی دینی و ملی خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے ان کی وفات کو ایک قومی نقصان قراردیا۔ علامہ محسن الحسینی

تدفین سے قبل وادی حسین ؑ میں مختار فورس کے رضاکار جوانوں نے علامہ مرحوم کو گارڈ آف آنر بھی پیش کیا اور مرحوم کی میت پر پھولوں کی چادر چڑھائی ۔

درایں اثنا قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ صوبہ سندھ کے صدر حجۃ الالسلام والمسلمین علامہ وقا ر حسن تقوی کی وفات پردلی افسوس کااظہارکیاہے ۔ مرحوم کے بڑے فرزندسیدمحمدذوالفقارتقوی کے نام اپنے تعزیتی پیغام میں انہوں نے علامہ تقوی کی خدمات کوسراہتے ہوئے کہاکہ مرحوم اسم بامسمیٰ نہایت حلیم الطبع، ملنساراورعالم باعمل تھے جوبڑے وقارکیساتھ دن رات تحریک نفاذفقہ جعفریہ کے اہداف کے فروغ کیلئے مصروف عمل رہے ، انکی وفات تحریک کیلئے بڑادھچکااورناقابل تلافی نقصان ہے ، دین و وطن کیلئے مرحوم کی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔انہوں نے کہاکہ علامہ وقار تقوی سچے عاشق رسول ؐ و اہلبیتؑ تھے زندگی بھر اتحاد بین المسلمین کیلئے کوشاں اور انتہاپسندی کے خلاف سینہ سپر رہے ۔

علامہ وقار حسن تقوی نے حکومتی ایوانوں میں مکتب تشیع کے مسائل کی بھرپور ترجمانی کی ۔ ٹی این ایف جے عزاداری سیل کے کنوینر کی حیثیت سے عزاداری میں درپیش رکاوٹوں کو دور کرنے میں ہمیشہ مصروف عمل رہے منبر پر حق و صداقت کے ترجمان بنے رہے ، دہشت گردی اور بدامنی کے بدترین حالات میں بھی امن و محبت کی آواز بن کر زندہ رہے ۔ مرحوم کی رحلت سے پیدا ہوانے والا خلا کبھی پر نہ ہو سکے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.