سعودی ولی عہد کے سامنے کشمیر وجنت البقیع کا ذکرنہ کرنا افسوسناک، ایران کو دہشتگرد قراردینے پرپاکستانی وزیرخارجہ کی خاموشی معنی خیزہے ؛بعض ایرانی لیڈروں کا پاکستان پر الزام خط امام خمینی سے انحراف ہے، آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

سعودی ولی عہدکی موجودگی میں وزیراعظم پاکستان کا مسئلہ کشمیر،تعمیرجنت البقیع کا ذکرنہ کرنا افسوسناک ہے۔ حامدموسوی

سعودی وزیرخارجہ کا ایران کو دہشتگرد قراردینا، پاکستانی وزیرخارجہ کی خاموشی معنی خیزہے ؟بعض ایرانی لیڈروں کاسانحہ زاہدان کاالزام پاکستان پردھرناخط امام خمینی سے انحراف ہے

پاکستان اسلام کاقلعہ ،ایٹمی قوت ،عالم اسلام کاواحدسہاراہے ،اسے تنہاکرنا شیطانی قوتوں کاایجنڈاہے ،پلوامہ ،زاہدان سانحات ہندوبنیے کے ڈرامے ہیں

حکومت کیجانب سے شرپسندی کو مکتب تشیع ’شیعہ کمیونٹی ‘ کے ساتھ نتھی کرنے کا نو ٹیفیکیشن وطن عزیزکی نظریاتی اساس کو کمزور کرنے کی سوچی سمجھی کوشش ہے

دنیائے مظلومین کی خواتین کا سیرت مادرعباس علمدارؑ کی پیروی میں اپنے سپوت قربان کر ناکشمیروفلسطین کی تحاریک حریت کیلئے قوت بخش ہے

قائدملت جعفریہ کاایام مادرعباس علمدارؑ کی اختتامی مجلس سے خطاب، ملک بھرمیں مجالس عزا، ماتمی جلوسوں کاانعقاد، خواتین کی مجالس میں تابوت کی برآمدگی

اسلام آباد(ولایت نیوز ) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلی قائد تحریک نفاذ فقہ جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہاہے کہ پلوامہ اورزاہدان سانحات کے دونوں ڈرامے ہندوبنیے کے رچائے ہوئے ہیں تاکہ پاکستان کے گردگھیراتنگ کرکے اسے تنہاکیاجاسکے،بعض ایرانی لیڈروں کاسانحہ زاہدان کاالزام پاکستان پردھرناخط امام خمینی سے انحراف ہے،سعودی وزیرخارجہ کا ٹرمپ کی بولی بولتے ہوئے ایران کودہشت گردقراردینااوراس موقع پرپاکستانی وزیرخارجہ کی خاموشی معنی خیزہے ؟،قائداعظم کے فرمان ’’کشمیرپاکستان کی شہ رگ ہے‘‘ کے پیش نظر وزیراعظم پاکستان کی جانب سے سعودی ولی عہدکی موجودگی میں اپنے خطاب میں مسئلہ کشمیراورتعمیرجنت البقیع وجنت المعلیٰ کاذکرنہ کرناافسوسناک ہے ، پاکستان اسلام کاقلعہ ،ایٹمی قوت اورعالم اسلام کاواحدسہاراہے لہذااسے تنہاکرنا شیطانی قوتوں کاایجنڈاہے جو جنوبی ایشیا میں بھارت کوپروان چڑھانے ،مشرق وسطیٰ میں اسرائیل کاتسلط قائم کرنے سے پوراہوسکتاہے ، حکومت پاکستان کی جانب سے شرپسندی کو مکتب تشیع ’شیعہ کمیونٹی ‘ کے ساتھ نتھی کرنے کا نو ٹیفیکیشن شرپسندی کو مزید ہوا دینے کے مترادف اور وطن عزیزکی نظریاتی اساس کو کمزور کرنے کی سوچی سمجھی کوشش ہے، دنیائے مظلومین کی خواتین سیرت مادرعباس علمدارکی پیروی کرکے کشمیروفلسطین میں اپنے سپوت قربان کررہی ہیں جوتحاریک حریت کیلئے قوت بخش ہے ۔ ان خیالات کااظہارانہوں نے منگل کو ایام مادرعباس علمدارؑ کی اختتامی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آقای موسوی نے باورکرایاکہ بے بہاکوششوں کے باوجود پاک بھارت تعلقات مثالی ہونے کاخواب ادھواررہاہے۔انہوں نے کہاکہ آغازسے لیکرآج تک متعددحکومتیں آئیں مگر پاکستان اوربھارت کے درمیان تعلقات کی خلیج کبھی کم نہیں ہوئی ،مہاتما گاندھی سے لیکرمنموہن سنگھ اوراب نریندمودی تک سات عشرے گزرگئے مگربھارت کے تیورویسے کے ویسے پہلے جیسے ہی ہیں اورہندوبنیے کی ذہنیت ہمیشہ کی طرح ٹیڑھی ہے ۔

انہوں نے یاددلایاکہ مودی نے توانتخابات ہی پاکستان دشمنی کی بنیادپرجیتا تھا،گجرات کے وزیراعلیٰ کے طورپراسکی مسلم دشمنی اورپاکستان کیساتھ معاندانہ رویہ کسی سے ڈھکاچھپا نہیں تھا، مگروزیراعظم بننے کے بعداقتدارکانشہ اس کے سرپرسوارہوگیا،پاکستان کوغیرمستحکم کرنے کیلئے کوئی ایساحربہ نہیں جواس نے استعمال نہ کیاہو،پلوامہ کا نیاڈرامہ اسی رویہ کاتسلسل ہے۔

انہوں نے کہاکہ ایران نے سب سے پہلے پاکستان کوتسلیم کیااوربھٹودورتک پاک ایران تعلقات مثالی رہے جوہندوبنیے کوناگوارتھاجس نے ان دونوں ممالک میں فاصلے پیداکرنے کیلئے چالیں چلیں اورکچھ پاکستان کے حکمرانوں کی نالائقیوں کی وجہ سے ایران ہم سے دورہوتاچلاگیا،نوبت یہاں تک پہنچ گئی کہ اس نے سانحہ زاہدان کاملبہ بھی پاکستان پرڈال دیا۔

آقای موسوی نے کہاکہ سعودی ولی عہدکے حالیہ دورہ پاکستان کے موقع پردہشت گردی کے سانحات کروانا پاکستان کے ترقیاتی منصوبوں کوسبوثاژ کرنے کی سازش تھی ۔

قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے کہاکہ حضرت ام البنین ؑ تاریخ عالم کی عظیم ترین مثالی خاتون جواپنی عفت وطہارت کے عنوان سے دنیائے نسوانیت کیلئے آئیڈیل ہیں۔ درایں اثناء ملک بھرمیں مجالس عزا، ماتمی جلوسوں کاانعقادکیاگیا جبکہ خواتین کی مجالس میں تابوت حضرت ام البنین ؑ برآمدہوئے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.