اے بنی آدم ابو طالب کے احساں یاد کر؛ 24تا 28 ربیع الاول ’’عالمگیرایام الحزن‘‘ منانے کا اعلان

ولایت نیوز شیئر کریں

ٹی این ایف جے کا نگہبانِ رسالتؐ حضرت ابو طالب ؑ کے وصال پر’’عالمگیرایام الحزن‘‘ منانے کا اعلان

حضور ؐ ؐنے حضرت ابوطالب ؑ کے سال وفات کو غم کا سال قراردیا،24تا28ربیع الاول مجالس، تعزیتی اجتماعات کے ذریعے دشمنان خدا و رسول ؐ سے بیزاری کی جائے۔شجاعت بخاری

اسلام آباد(ولایت نیوز )تحریک نفاذ فقہ جعفریہ پاکستان کے سیکرٹری جنرل سید شجاعت علی بخاری نے قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کی خصوصی ہدایت پرنگہبانِ رسالتؐ عم رسولؐ حضرت ابو طالب ؑ کے وصال کی مناسبت سے 24تا28ربیع الاول پانچ روزہ’’ عالمگیرایام الحزن‘‘ منانے کا اعلان کیا ہے۔

ہیڈکوارٹر مکتب تشیع سے جاری کردہ بیان میں انہوں نے کہا کہ قبلہ اول اور اسلامی شعائر کے تحفظ کیلئے امتِ مسلمہ کو حضرت ابو طالبؑ کی سیرت و کردار اپنا نا ہو گاجن کی زندگی میں کفار مکہ تما تر کوششوں کے باوجود نبی کریم ؐکا بال بیکا نہ کرسکے۔انہوں نے کہا کہ حضرت ابو طالب نے نبی کریم ؐ کو ہمیشہ اپنی اولاد سے افضل جانا اور جب بھی خطرہ محسوس ہوا اپنی اولاد کو نبیؐ کی ڈھال بنا کر پیش کیا، آج بھی مسلم حکمرانوں کو اپنے ذاتی اور ملکی مفادات پر عالم اسلام اوردین مصطفوی ؐ کے مفادات کو ترجیح دیتے ہوئے صیہونیت کیخلاف مشترکہ جراتمندانہ پالیسی اپنانی اور دنیائے کفر کے مقابلے میں یکجان ہو نا ہوگا ۔شجاعت بخاری نے کہا کہ مسلم امہ کیخلاف عالمی سرغنے کے منافقانہ طرز عمل کے پیش نظر واشنگٹن سے دوستی کے دیوانے مسلم حکمرانوں کی آنکھیں کھل جانی چاہئیں،موجودہ حالات کا تقاضا ہے کہ مسلم ممالک اپنے باہمی اختلافات ختم کریں۔انہوں نے کہا کہ حضور ختمی مرتبتؐ کے عم بزرگوار اور شیرخدا حضرت علی المرتضیٰ ؑ کے والد نامدار رئیس مکہ کلید بردار خانہ کعبہ حضرت ابو طالب ؑ رسول ؐ خدا کے مربی و محافظ و پاسدار تھے جن سے حضور اکرمؐ کی عقیدت و محبت کا اس بات سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ سرکار دو عالم ؐنے حضرت ابوطالبؑ کے سال وفات کو عام الحزن(یعنی غم کا سال) قراردیا۔

سیکرٹری جنرل ٹی این ایف جے شجاعت بخاری نے اسلامیان عالم سے اپیل کی کہ وہ سنتِ رسول ؐ کی پیروی کرتے ہوئے ایام الحزن کے دوران سرکاررسالت مآبؐ ،اہلبیت اطہارؑ اور پاکیزہ صحابہ کبار کو تعزیت و تسلیت پیش کرنے کیلئے مجالس عزا اور تعزیتی اجتماعات کا انعقاد کرکے اس عہد کی تجدید کریں کہ حضرت ابو طالب کے فرمان کے مطابق سیرت مصطفوی کی پیروی کرتے ہوئے دین و وطن کی سربلندی کیلئے اغیار کی ہر سازش کا باہمی اتحاد کیساتھ مقابلہ کریں گے اور قومی غیرت و حمیت پر ہر گز کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے۔

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.