اربعین حسینیؑ عقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا,مدنی ریاست کے قیام کیلئے حکمرانوں کو قول و فعل کا تضاد ختم کرنا ہوگا، آغا حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

صدروزیر اعظم چیف جسٹس کاامام حسین ؑ کے جلوسوں میں نہ آنا سوالیہ نشان ہے ؟

 مرکزی جلوس میں میڈیا اور عزاداروں سے قائد ملت جعفریہ کا خطاب

سرزمین بطحا پر حضرت ابراہیم ؑ کی دی ہوئی اذان کی طرح میدان کربلا میں شہزادہ علی اکبرؑ کی دی ہوئی اذان پر لبیک کہتے ہوئے6کروڑ سے زائد عزادار کربلا میں جمع ہیں

 وزارت داخلہ میں عزاداروں کیلئے کنٹرول رومز قائم نہ کرنا لمحہ فکریہ ہے، آغا حامد موسوی

تجاوزات و ناجائز تعمیرات کی مہم کامیاب بنانے کیلئے وزیراعظم اپنے گھر سے ابتداء کریں،

پاکستان کو گروہی سٹیٹ بنانے کی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے

استعماری مفادات کیلئے عالم اسلام کی غلط منظر کشی کی جا رہی ہے

پاکستان یمن شام بحرین سمیت دنیا میں کہیں کوئی شیعہ سنی تنازعہ نہیں، نہ پیدا ہونے دیں گے

یمن میں غیر آئینی حکومت کیخلاف جدوجہد کو بیرونی مداخلت سے کچلنا ناقابل فہم ہے

خارجہ پالیسی کی سمت درست کی جائے دشمن کم اور دوست زیادہ بنائے جائیں دیرینہ دوست ایران کو نظرانداز نہ کیا جائے

فوارہ چوک میں علامہ قمر زیدی کا عزاداروں سے خطاب،دوران جلوس ہزاروں عزاداروں کی زنجیر زنی و قمہ زنی،بیسیوں ماتمی تنظیموں کی ماتمداری و نوحہ خوانی

راولپنڈی (ولایت نیوز )دنیا بھر کی طرح وطن عزیز پاکستان میں دین خدا و شریعت مصطفی ؐکی بقاء اور انسانیت کی اعلیٰ اقدار کو ابدی حیات عطا کرنے والے شہیدِ اعظم اور محسنِ انسانیت حضرت امام حسین علیہ السلام اور اُنکے72جانثاروں کا چہلم (اربعین حسینی )منگل کو مذہبی و قومی جذبے اورعقیدت و احترام کے ساتھ منایا گیا اس مو قع پر پاکستان کے تمام شہروں سمیت دنیا بھر میں ماتمی جلوسوں کا انعقاد کیا گیا کربلا (عراق)میں کئی کروڑ عزاداروں کا اجتماع منعقد ہواجس میں دنیا بھر سے بلاتفریق مذہب ملک و مسلک عزاداروں نے شرکت کرکے نواسہ رسول ؐ امام حسین ؑ کی لہورنگ قربانی کو خراج تحسین پیش کیا۔

جڑواں شہروں راولپنڈی اور اسلام آباد کے مرکزی جلوس چہلم امام بارگاہ عاشق حسین تیلی محلہ ،امام بارگاہ کرنل مقبول حسین، امام بارگاہ حفاظت علی شاہ سے حسب روایت بر آمد ہوئے جن میں ہزاروں عزاداروں نے شرکت کی ۔ قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کمیٹی چوک میں مرکزی جلوس چہلم میں شرکت اور تبرکات کی زیارت کی ۔

اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں اور عزاداروں سے خطاب کرتے ہوئے آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ مدنی ریاست کے قیام کیلئے حکمرانوں کو قول و فعل کا تضاد ختم کرنا ہوگا۔گزشتہ تین عشروں میں پہلی بار وزارت داخلہ میں عزاداروں کے مسائل کے حل کیلئے کنٹرول رومز قائم نہیں کیئے گئے, نہ ہی نوٹیفیکیشن جاری ہوا،تجاوزات و ناجائز تعمیرات کی مہم کامیاب بنانے کیلئے وزیراعظم اپنے گھر سے ابتداء کریں۔آج پوری انسانیت میں حسینیتؑ کی گونج زینبی ؑ کردار کے سبب ہے ، سرزمین بطحا پر حضرت ابراہیم ؑ کی دی ہوئی اذان کی طرح میدان کربلا میں شہزادہ علی اکبرؑ کی دی ہوئی اذان پر لبیک کہتے ہوئے6کروڑ سے زائد عزادار کربلا میں جمع ہیں ، دنیا بھر کی آزادی و حریت کی تحریکوں کا منبع و سرچشمہ امام حسین ؑ کی قربانی اور زینب ؑ و زین العابدین ؑ کے کربلا و دمشق میں دیئے گئے خطبات ہیں۔

جلوس اربعین کے دوران قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں۔
جلوس اربعین کے دوران قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حضرت آدم سمیت انبیاء نے بھی امام حسین ابن علی ؑ کی شہادت پر گریہ کیارسول خدا ؐ کا فرمان ہے جو حسین ؑ پر گریہ کرے گااسے میں ہاتھ پکڑ کر جنت میں لے جاؤں گااسیران کربلا نے فلسفہ شہادت کو اجاگر کیا اور عزاداری کی بنیاد رکھی۔آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے اس امر پر دکھ کا اظہار کیا کہ صدر, وزیر اعظم, چیف جسٹس اقلیتوں تک کے تہواروں میں شرکت کیلئے چر چ گورداواروں مندروں میں چلے جاتے ہیں لیکن دین و شریعت کے محسن نواسہِ رسولؐ امام حسین ؑ کے جلوسوں میں کیوں نہیں آتے ارباب اقتدار کی حسینیت ؑ سے دوری سوالیہ نشان ہے ۔مکتبِ تشیع سے بیگانگی کا رویہ افسوسناک ہے پاکستان کو غیر محسوس انداز میں نظریہ اساسی سے ہٹا کر گروہی سٹیٹ بنانے کی سازش ہو رہی ہے, ایسی کوئی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ استعماری مفادات کیلئے عالم اسلام کی غلط منظر کشی کی جا رہی ہے پاکستان یمن شام بحرین لیبیا شام قطیف دمام سمیت دنیا میں کہیں کوئی شیعہ سنی تنازعہ نہیں شیطانی طاقتیں شیعہ سنی لڑائی کو ڈھنڈورا پیٹتی ہیںیمن تنازعہ کو غلط انداز میں اجاگر کیا گیا جبتک دم میں دم ہے شیعہ سنی تفریق کی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔یمن میں غیر آئینی حکومت کیخلاف اکثریتی جماعت حوثیوں کی جدوجہد کو بیرونی مداخلت سے کچلنا ناقابل فہم ہے، بیرونی دنیا کو حوثیوں کے موقف کی حمایت کرنا چاہئے تھی ۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہاکہ ہماری خارجہ پالیسی ناکام رہی ہے خارجہ پالیسی کی سمت درست کی جائے دشمن کم اور دوست زیادہ بنائے جائیں دیرینہ دوست ایران کو نظرانداز نہ کیا جائے ایران نے ہر مشکل وقت میں مدد کی ایران سے دوری کی وجوہات تلاش کی جائیں۔ سی پیک کے معاملے پر چین کو نظر انداز نہ کیا جائے ۔ فرمان امیر المومنین علی ابن ابی طالب ؑ ؑ کی رو سے دوست ، دوست کا دوست اور دشمن کا دشمن دوست ہوتے ہیں اور دشمن کے ساتھ ساتھ دشمن کا دوست اور دوست کا دشمن بھی دشمن ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کالعدم تنظیموں کی بڑھتی سرگرمیاں تشویشناک ہیں نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کروایا جائے۔

جلوس نے فوارہ چوک میں پہنچ کر مجلس کی شکل اختیار کرلی جہاں عزاداروں سے خطاب کرتے ہوئے ٹی این ایف جے کے سیکرٹری اطلا عات علامہ قمر زیدی نے کہا کہ یہ اربعین ہو یا عزاداری ، سیدہ زینب بنت علیؑ ، امام زین العابدینؑ اور اسیران کربلا کی یادگار ہے جنہوں نے دربار یزید و ابن زیاد اور بازاروں میں اپنے خطبات سے یزیدیت کے قصرگرا دیئے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ 8ربیع الاول تک عزاداری کے جلوس جاری رہیں گے جنہیں موسوی جونیجو معاہدے کے تحت تحفظ فراہم کیا جائے ، میلا دمصطفی ؐوحدت و اخوت کے جذبے کے تحت منائیں گے ۔

علامہ سیدقمرحیدرزیدی نے امام عالی مقام کی انمول قربانی پرروشنی ڈالی اورشام سے رہائی کے بعدخاندان رسالت کی خواتین کی کربلا و مدینہ واپسی کے مصائب بیان کئے جسکے بعد فوارہ چوک میں زنجیرزنی اور ماتم داری کی گئی اس مو قع پر معروف سکالر چوہدری ابو بیدار علی ،ڈاکٹر این ایچ نقوی نے بھی خطاب کیا ۔

امام بارگاہ شہیدان کربلاٹائر بازار اورمحلہ دربار سخی شاہ چن چراغ سے سجادہ نشین سیداعتباربخاری کی رہائشگاہ حسینی منزل سے علم وفاسرکارحضرت عباس ؑ سجادہ نشین سیدطاہرحسین شاہ کی رہائشگاہ مشہدی سے برآمد ہونے والے ذوالجناح کے جلوس بھی مرکزی جلوس چہلم میں شامل ہوگئے۔مرکزی جلوس قدیمی امامبارگاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوا۔علمائے کرام اورتحریک کے سینئرعہدیداران اختتام تک جلوس میں شریک رہے۔مختار سٹوڈنٹس آرگنائزیشن ،مختار جنریشن کی جانب سے فوارہ چوک میں مرکزی عزاداری کیمپ لگا یا گیا تھا ابراہیم سکاؤٹس کے چاق وچوبنددستے نے تمام راستے جلوس کی قیادت کی جبکہ حبیب بینک چوک میں میڈیکل کیمپ لگایا گیاجہاں ماتمیوں کیلئے ابتدائی طبی امداد کا بندوبست کیا گیا تھا،عزاداروں کی سہولت کیلئے جامع مسجد روڈ پر مختار آرگنائزیشن نے عزاداری کیمپ لگایا۔

علمائے کرام ، مختار فورس کے جوان ،تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کی جعفریہ ایکشن کمیٹی اور محرم کمیٹی عزاداری سیل کے رہنما اورمقامی انتظامیہ کے افسران پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ تمام راستے جلوس کے ساتھ تھے۔درایں اثنا ہیڈ کوارٹر مکتب تشیع میں آمدہ اطلاعات کے مطابق کراچی لاہور پشاور کوئٹہ ملتان فیصل آبادگوجرانوالہ گجرات ڈیرہ غازی خان سکھر خیر پور حیدر آباد ڈیرہ اسماعیل خان جھنگ سرگودھا لیہ خوشاب چکوال جہلم گجرات ڈیرہ مراد جمالی جیکب آباد سمیت ملک بھر کے تمام چھوٹے بڑے شہروں قصبوں سے اربعین حسینی چہلم شہدائے کربلا کے ماتمی جلوس برآمد ہوئے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.