عزاداری کے انعقاد میں کاوٹوں کے خاتمے کیلئے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے وفد کی گورنر پنجاب سے ملاقات

ولایت نیوز شیئر کریں

محرم الحرام کے حوالے سے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ پنجاب کے نمائندہ وفد کی گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے ملاقات

عزاداران و بانیان کو درپیش مسائل کے حل کیلئے فوری اقدامات کا مطالبہ، گورنر پنجاب کی ٹھوس اقدامات کی یقین دہانی

لاہور ( ولایت نیوز) محرم الحرام کے انتظامات اور عزاداران و بانیانِ مجالس و جلوسہائے عزا کو درپیش مسائل کے حوالے سے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ پنجاب کے وفد کی صوبائی ناظم الامور علامہ سید محسن علی ہمدانی کی قیادت میں گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور سے گورنر ہاوس لاہور میں ملاقات کی۔

وفد میں علامہ محسن علی ہمدانی کے ہمرا ہ صوبائی نائب صدر علامہ زائد عباس کاظمی، صوبائی ترجمان سید حسن کاظمی، صوبائی رابطہ سیکرٹری چوہدری لعل خان، ریجنل صدر لاہور سید ذوالفقار حیدرنقوی، ریجنل صدر گوجرانوالہ چوہدری ایوب اوپل اور ملک ریاض حسین شامل تھے۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے علامہ محسن علی ہمدانی نے امت مسلمہ کیلئے محرم الحرام کی اہمیت اور امام حسین ؑ کی جانب سے میدان کربلا میں دی جانیوالی عظیم قربانی کی یاد کو حق و باطل میں حدِ فاصل قرار دیا اور محرم الحرام کے دوران صوبہ پنجاب میں مختلف مقامات پر عزاداریِ سید الشہدا ء کے سلسلہ میں مجالس و جلوسہائے عزا کے حوالے سے عزاداروں کو درپیش مسائل پر روشنی ڈالی اور انکے حل کیلئے حکومتی کنڑول رومز کو تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کی جانب سے قائم کردہ محرم کمیٹی عزاداری سیل کے ساتھ مربوط رکھنے کا مطالبہ کیا۔

وفد نے دیگر اہم امور پر بھی حکومت پنجاب سے فوری اقدامات کا مطالبہ کیا جنمیں کچھ مقامات پرنچلی سطح کی انتظامیہ کی جانب سے روائیتی مجالس و جلوسہائے عزا کے پروگراموں میں رخنہ اندازی و رکاوٹوں کے مسائل ، جیلوں میں مجالس عزا کے انعقاد اور ان سے جید علماء و ذاکرین کے خطاب پر ناحق پابندی، بیشتر اضلاع میں پر امن اور ثقہ علماء و ذاکرین پر بے جا ضلع بندیاں ، سیاسی و ذاتی مخالفت کے باعث محب وطن اور بیگناہ افراد کے شیڈول فور میں پھنسائے جانے جیسے مسائل شامل تھے۔

تحریک نفاذ فقہ جعفریہ پنجاب کے وفد نے حکومت سے انسداد دہشتگردی ایکٹ اور نیشنل ایکشن پلان کی تمام شقوں پر عملدرآمد کو یقینی بنانے اور کالعدم گروپوں اور انہیں ملنے والی بیرونی امداد پر عملی پابندی لگانے کی ضرورت پر زور دیا۔ اس موقع پر گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کہا کہ امام حسین ؑ کی قربانی نہ صرف امت مسلمہ بلکہ پوری انسانیت کی بقاء کیلئے تھی جو تاریخ میں سنہری حروف سے رقم ہے اور اسکی یاد تاابد قائم رہے گی۔

وفد کی جانب سے پیش کردہ مسائل کے حوالے سے چوہدری سرور نے یقین دلایا کہ حکومت تمام مکاتب فکر کے حقوق کی یکساں طور پر فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے کوشاں ہے اور ملت تشیع کو درپیش مسائل کا مکمل احساس رکھتی ہے، گورنر پنجاب نے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کی جانب سے پیش کردہ مسائل پر فوری اور ٹھوس اقداما ت کی یقین دہانی کروائی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.