اقتدار کو عزیز جاننے والوں نے وطن اور جمہوریت کو بازیچہ اطفال بنا دیا، کالعدم تنظیموں کو چھٹی دے کر بلیک لسٹ میں شمولیت کی راہ ہموار کی جا رہی ہے ،آغاحامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

 اداروں کی لڑائی کا تاثردشمن کو تقویت بخش رہا ہے
بلوچستان کو بنگلہ دیش ثانی بنانے کی سرتوڑ کوششیں جاری ہیں پاکستان روس چین ایران کا دہشت گردی کے خلاف اتحاد خوش آئند ہے
ادارے تضادات کا شکار رہے تومزید مصائب و آلام جنم لیں گے ، آئین کے دائرہ میں رہتے ہوئے دشمنوں کی سازشیں ناکام کی جائیں
پاکستان کو بچانے اور دہشت گردی کو مٹانے کیلئے ایثار ابو طالب ؑ اور جذبۂ معصومہ قم ؑ دکھانا ہوگا ، ایام عظمت انساں کی تقریب سے خطاب

اسلام آباد( ولایت نیوز) سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلیٰ و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ کالعدم تنظیموں کو چھٹی دے کر ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ کے بعد بلیک لسٹ میں شمولیت کی راہ ہموار کی جا رہی ہے ، اقدار سے زیادہ اقتدار کو عزیز جاننے والوں نے وطن اور جمہوریت کو بازیچہ اطفال بنا دیا ہے، دہشت گردی کی ایک نئی لہرکا بنیادی سبب ایکشن پلان پر عمل نہ ہونا ہے پاکستان روس چین ایران کا دہشت گردی کے خلاف اتحاد خوش آئند ہے، قومی اداروں کی لڑائی کا تاثر ابھار کر دشمن کی تقویت کا سامان کیا جارہا ہے، ابلیسی ایجنڈے کے تحت بلوچستان کو بنگلہ دیش ثانی بنانے کی سرتوڑ کوششیں جاری ہیں ادارے تضادات کا شکار رہے تو مستقبل مزید مصائب و آلام کو جنم دے سکتا ہے ، تمام ادارے آئین کی روشنی میں اپنے دائرہ میں رہتے ہوئے دشمنوں کی سازشیں ناکام کریں بصورت قوم اور تاریخ انہیں کبھی معاف نہیں کر ے گی، پاکستان کو بچانے اور دہشت گردی کو مٹانے کیلئے ایثار ابو طالب ؑ اور جذبۂ معصومہ قم ؑ دکھانا ہوگا ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نگہبان رسالت ؐ حضرت ابو طالب ؑ اور حضرت معصومہ قم ؑ کی ولادت پرنور کی مناسبت سے ’ایام عظمت انساں ‘کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ پاکستان کے خلاف آغاز ہی سے وہ قوتیں سرگرم عمل رہی ہیں جو تقسیم ہند ہی نہیں دو قومی نظریے کی بھی سخت مخالف تھیں ان قوتوں نے نظریہ اساسی کو سبوتاژ کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیا، دنیا جانتی ہے کہ پاکستان اسلام کا قلعہ ہے اور ریاست مدینہ کے بعد قائم ہونے والی پہلی اسلامی نظریاتی ریاست ہے اسی لئے وطن عزیز اسلام دشمنوں قوتوں کا ہمیشہ ہدف رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ بھارتی خفیہ ایجنسی راکا قیام 65کی جنگ کے بعد عمل میں لایا گیا جو اپنے قیام کے پہلے مقصد یعنی پاکستان کو ولخت کرنے میں کامیاب رہی ، لاہور میں او آئی سی کے دوسرے سربراہی اجلاس کے بعد بھارتی نیتاؤں کی نیندیں حرام ہو گئیں کہ پاکستان عالم اسلام کا مرکز بننے جا رہا تھا اور سازش در سازش کے تحت عالم اسلام کے اتحاد کے تمام محرکین ذوالفقار علی بھٹو، شاہ فیصل ، عرفات ، قذافی کو مار ڈالا گیا۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ نائن الیون کا مقصد بھی مسلم ریاستوں میں مداخلت کی راہ ہموار کرنا تھا جس میں استعماری ایجنسیوں کے ملوث ہونے کی حقیقت ڈھکی چھپی نہیں رہی ، پاکستان کو اپنی جنگ کا اکھاڑہ بنا کر امریکہ بہادر نے دوہرے مفادات حاصل کئے ایک طرف اپنے دیرینہ دشمن سوویٹ یونین کو پاش پاش کردیا تو دوسری جانب پاکستان کا گوشہ گوشہ دہشت گردی سے چھلنی کردیا گیا۔انہوں نے کہا کہ جب سے انتخابات کا دول ڈالا گیا ہے ایک سانحہ کے آنسو خشک نہیں ہوتے کہ دوسرے سے دوچار کر دیا جاتا ہے ، بنوں پشاور مستونگ کے سانحات سے پورا ملک سوگوار ہے ۔

آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہا کہ دہشت گرد درندے انسانیت کو توقیر کو پامال کررہے ہیں جن سے نمٹنے کیلئے ذات جماعت صوبے مسلک مکتب سے بالاتر ہو کر پوری قوم کو متفقہ لائحہ عمل اختیار کرنا ہو گااور کالعدم جماعتوں کے ساتھ ساتھ ان کے سرپرستوں پر بھی ہاتھ ڈالنا ہوگا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.