امریکہ کے سنگ رہنے سے پاکستان کاانگ انگ زخمی ہے۔ آغاحامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

حکمران ، سیاستدان باہمی اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے امریکی وزیر خارجہ کے دور پاکستان کے تناظر میں مضبوط دوٹوک پیغام دیں
استعماری سرغنہ ذہن نشین رکھے ا ب پاکستان ، یمن لیبیا،افغانستان یا 71ء والا پاکستان نہیں ایٹمی قوت ہے ،ٹرمپ اوراُسکے پٹھوؤں کو چھٹی کا دودھ یاد کرا دیا جائیگا
پاکستا ن کی مدد سے امریکہ دنیا کی سپر پاور بن کر ابھرا جس نے ہمیں دہشتگردکلاشنکوف اور ہیروئن بطور تحفہ پیش کیے، ساتویں امریکی بحری بیٹرے کے انتظار نے بیٹرہ غرق کیا
مغوی کینڈین جوڑے کی پاک فوج کے ہاتھوں بازیابی پر پاکستان سے امریکہ کا اظہار تشکر منافقت پر مبنی تھا جس کا بھانڈاپھوٹ گیا ہے
قوم وطن عزیز کی بقا ء و سلامتی کیلئے سیسہ پلائی ہوئی دیوار ہے، حضرت سکینہ بنت حسین ؑ کا معصومانہ کردار دختران عالم کیلئے مشعل راہ ہے۔قائد ملت جعفریہ کا علمائے جعفریہ سے خطاب

اسلام آباد( ) سرپرست اعلیٰ سپریم شیعہ علما بورڈ قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ بھارت امریکہ گٹھ جوڑ خطرہ عظیم ہے لہٰذا حکمران ، سیاستدان ایکدوسرے کو زیر کرنے کی بجائے باہمی اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے امریکی وزیر خارجہ کے دورہ پاکستان کے تناظر میں مضبوط دوٹوک پیغام دیں، استعماری سرغنہ ذہن نشین رکھے کہ ا ب پاکستان ، یمن لیبیا،افغانستان یا 71ء والا پاکستان نہیں بلکہ ایٹمی قوت ہے ،وطن عزیز کی بقاء و سلامتی کیلئے ٹرمپ اور اُسکے پٹھوؤں کو چھٹی کا دودھ یاد کرا دیا جائے گا ، کمسن مجاہد کربلا حضرت سکینہ بنت حسین ؑ کا معصومانہ کردار دختران عالم کیلئے مشعل راہ اور بہترین نمونہ عمل ہے ۔ ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے جمعہ کوجمعیت علمائے جعفریہ پاکستان کے عہدیداران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ آقای موسوی نے باور کرایا کہ پاکستان نے آغا ز ہی سے امریکہ کو فوقیت دی اور قیام پاکستان سے لے کر آج تک اس کیلئے استعمال ہوتا رہا ہے، ضیاء دور میں اُسی کی ایماء پر افغانستان میں جنگجوؤں کی مدد کی ، روس کا اخراج ہوا تو امریکہ دنیا کی سپر پاور بن کر ابھرا جس نے ہمیں جنگجو دہشتگرد بنا کربطور تحفہ کلاشنکوف اور ہیروئن کے ہمراہ پیش کیے۔ آقای موسوی نے کہا کہ نائن الیون کا ڈرامہ رچا کر کر پاکستان کو فرنٹ لائن میں پھنسا دیا گیااُس دن سے لے آج تک پاکستان بے بہا قربانیاں دے رہا ہے ۔ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ واہ رے ٹرمپ تیری کونسی کل سیدھی؟ جو یہ راگ الاپ رہا کہ امریکہ کیساتھ تعلقات ماضی میں بھی پاکستان کے فائدے میں رہے ہیں حالانکہ پوری دنیا پر یہ عیاں ہے کہ امریکہ کے سنگ رہنے سے پاکستان کا انگ انگ زخمی ہے کیونکہ اُس نے ہمیشہ بھارت کو ہی ترجیح دی ہے اور اُسے اپنا فطری اتحادی کہتا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ ٹرمپ نے بر سر اقتدار آ کر پہلے اسلامی دہشتگردی کی اختراع ایجاد کی ، نصف درجن سے زائد مسلم ممالک کے باشندوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی لگائی ، 38ملکی نام نہاد مسلم اتحاد کی داغ بیل ڈالی ، اس کارنامے پر دوست عرب ملک نے ٹرمپ کو بیش بہا تحائف سے نوازا جبکہ اُس نے ایران کو دہشتگردی کا محور قرار دیا اور پاکستان کو گھاس بھی نہ ڈالی۔ اُنہوں نے کہا کہ مغوی کینڈین جوڑے کی پاک فوج کے ہاتھوں بازیابی پر پاکستان سے امریکہ کا اظہار تشکر منافقت پر مبنی تھا جس کا بھانڈاپھوٹ گیا ہے کیونکہ ایک اخبار نے لکھ دیا ہے کہ اگر پاکستان آپریشن نہ کرتا تو امریکہ اس کیلئے اپنی نیوی کو استعما ل کرتا ۔ اُنہوں نے کہا کہ نئی ٹرمپ پالیسی کے تحت امریکہ کی یہ دھمکی اُسکا کا پردہ چاک کرنے کیلئے کافی ہے کہ اگر پاکستان نے اپنا رویہ تبدیل نہ کیا اورہمارے لئے استعمال نہ ہوا تو اُسے مزید مصائب و آلام میں جکڑ دیا جائے گا لہٰذا حکومت آزمائے ہوئے آزمانے کی جہالت سے اجتناب کرتے ہوئے وطن عزیز کی خارجہ پالیسی کا قبلہ درست کرے پوری قوم وطن عزیز کی بقا ء و سلامتی اور استحکا م کیلئے سیسہ پلائی ہوئی دیوار بن کر ہر قسم کی قربانی پیش کرنے کیلئے ہر وقت تیار ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3727

Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3727