خدا کے بندوں کی ہدایت کیلئے نواسہ رسول ؐ نے اپنے لہو سے آئین رقم کیا،حافظ تصدق حسین

ولایت نیوز شیئر کریں

قرآن ہر دور کا زندہ معجزہ اور آل محمد معجزنما ہیں‘عشرہ محرم کی مجالس سے علامہ قمرزیدی،سیدہ بنت علی موسوی  اور دیگر کا خطاب
قراردادوں میں ضابطہ عزاداری پر عملدرآمدکا عہدو پیمان،ظلم نے نفرت اور مظلوم کی حمایت کیلئے جدوجہد جاری رکھنے کا عہد ۔مجالس کے اختتام پر ماتمداری کی گئی

راولپنڈی (رجب علی کاظمی )نواسہ رسول ،جگرگوشہ علی ؑ و بتول ؑ حضرت امام حسین علیہ السلام اور ان کے 72جانثاروں کی لازوال اور بے مثال قربانیوں کو سپاسِ عقیدت پیش کرنے کیلئے ملک کے دیگر شہروں کی طرح جڑواں شہروں راولپنڈی اسلام آباد کے مختلف امامبارگاہوں اور عزاخانوں میںیکم محرم کی مجالس کا انعقاد کیا گیا جن میں بڑی تعداد میں عزاداران امام عالی مقام ؑ نے شریک ہوکر بارگاہ رسالت میں تعزیت و پرسہ پیش کیا۔

امام بارگاہ ناصرالعزامیں علامہ حافظ تصدق حسین نے کہا کہ خدا کے بندوں کی ہدایت اور صراطِ مستقیم پر گامزن رہنے کیلئے نواسہ رسول ؐ نے رہتی دنیا تک کے انسانوں کیلئے اپنے لہو سے وہ آئین رقم کردیا جس پر عمل پیرا ہوکر ہر انسان اپنی منزل مراد پاسکتا ہے ۔مجلس عزا کے شرکاء نے ایک قرارداد متفقہ طور پر منظور کی جس میں اس عہد کا اعادہ کیا گیا کہ عزاداران مظلوم کربلا محرم الحرام کی مجالس اور ماتمی جلوسوں کے دوران قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کے اعلان کردہ ضابطہ عزاداری کی مکمل پاسداری کریں گے۔ قرارداد میں ا س عہد کا اظہار کیا گیا کہ عزاداری مظلوم کربلا بلا خوف خطر کسی روک ٹوک کے بغیر جاری رکھی جائے گی ۔

علی مسجد راولپنڈی میں عشرہ محرم کی پہلی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے الحاج علامہ سید قمر حیدر زیدی نے کہا کہ قرآن ہر دور کا زندہ معجزہ اور آل محمد معجزنما ہیں۔انہوں نے کہا کہ کربلا بدکرداری کے مقابلے میں تقویٰ و طہارت کی وہ رزمگاہ ہے جہاں ہر پیرو جواں پرہیزگار ی اور ایمان کامل کا مجسمہ نظر آتا ہے۔انہوں نے کہا کہ امام عالی مقام حسین ابن علی ؑ نے دین الہی کے تحفظ کیلئے رہتی دنیا تک کے انسانوں کو لازوال اور بے مثال سلیقہ سکھایا ۔انہوں نے کہا کہ کربلا حق و باطل کے درمیان وہ عظیم معرکہ تھا جس میں حق کے پاسدار و پاسبان حسین ؑ ابن علی ؑ نے اپنے اہل و عیال اور باوفا اصحاب و انصار کے ہمراہ جام شہادت نوش کرکے اسلام کو حیاتِ ابدی عطا کردی۔مجلس عزا سے مفتی باسم زاھری اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پر عساکر پاکستان کے آپریشن ضرب عضب کی کامیابی اور وطن عزیز پاکستان کی سلامتی و استحکام کیلئے دعائیں مانگی گئیں۔امام بارگاہ قصر ابو طالب مغل آباد میں علامہ حسین مقدسی نے مجلس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فاطمہ ؑ کے چاند نے اسلام کو اپنے خون سے سیراب کیا اور قیامت تک کیلئے باضمیر انسانوں کو عزت و شرافت،کرامت اور صبر واستقامت کا وہ درس دیا جس سے استفاد ہ کرکے ہم آج بھی بڑے سے بڑے ظالم و جابر کا سر خم کرسکتے ہیں۔

امامبارگاہ زینببہ ؑ میں مجلس خواتین سے خطاب کرتے ہوئے خطیبہ آل نبی سیدہ بنت علی موسوی  نے کہا کہ کربلا جبر کے مقابلے میں صبر کا استعارہ ہے جس کی پیروی کرکے ہر فاسق و فاجر کو اس کے عبرتناک انجام تک پہنچایا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جب یزید پلید اسلامی حکومت کے تخت کا وارث بن بیٹھا اور اپنی سیاہ کاریوں سے اسلام کے سرمدی اصولوں کا مذاق اڑانے لگا تو حسین ؑ ابن علی ؑ نے اس کے سوال بیعت کو ٹھکرا دیا اور اپنے لہو کے سمندر میں تیر کر اسلام کو حیاتِ جاوداں سے ہمکنار کردیا۔دربارعالیہ سخی شاہ پیاراکاظمی چوہڑہڑپال میں علامہ مطلوب حسین تقی نے کہا کہ حضرت امام حسین ؑ کی عظیم قربانیوں کی بدولت آج حسینیت ہر سانس میں رواں دواں ہے اور حسینیت کا پرامن ماتمی احتجاج آج بھی حق مظلوم انسانوں کیلئے بڑی ڈھارس ہے۔ذاکرغلام عباس فریدکا، علامہ کاظم رضاترابی نے بھی خطاب کیا۔

امامبارگاہ کرنل مقبول حسین میں علامہ ڈاکٹر شبیہ الحسن رضوی نے عشرہ محرم کی مجالس سے خطاب کیا۔

مرکزی امام بارگاہ قصرالمنتظر علیہ اسلام حیدری آباد ڈی ایچ اے فیز۲ میں خواتین کی مجالس کے عشرہ کی پہلی مجلس امام زمانہ علیہ اسلام کی زیر سرپرستی اور حاجی غلام اصغر حیدری کی زیر نگرانی منعقد ہوئی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3721

Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3721