قائد ملت جعفریہ آغا حامد موسوی عید غدیر کی تقریب سے خطاب کررہے ہیں ۔

عید غدیر:ظلم و بربریت کے خاتمے کیلئے مولا علی ؑ کا طرزِ زندگی اختیار کرنا ہوگا۔حامد موسوی

ولایت نیوز شیئر کریں

عید غدیر اعلان ولایت علی ؑ کی یادگارہے جب دین مکمل اور نعمتیں تمام ہوئیں۔قائد ملت جعفریہ کا عالمگیر ہفتہ ولایت کے آغاز پر محفل سے خطاب

اسلام آباد(ولایت نیوز) سرپرست اعلیٰ سپریم شیعہ علما بورڈ قائد تحریک نفاذ فقہ جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے کہا ہے کہ ظلم و بربریت کے خاتمے کیلئے علی ؑ کا طرزِ زندگی اختیار کرنا ہوگا ،مسلم امہ کے مصائب و آلام ، دشمنوں کے حصار کا اصل سبب دامن اسلام سے دوری ہے ،اگر مسلم حکمران بندہ بنتے، استعماری و صہیونی قوتوں کی بجائے ذات پروردگار پر بھروسہ کرتے تو شیطانی قوتوں کو مسلم ممالک میں مداخلت اور اپنے نظریات ان پر مسلط کرنے کی جرات نہ ہوتی، یہود وہنود کاگٹھ جوڑمسلمانوں کیلئے خطرہ عظیم ، پاکستان کا اسلام کا قلعہ وایٹمی قوت ہونا اور سی پیک استعمار کی موت ہے،شیطانی قوتوں کے شر سے بچنے کیلئے او آئی سی کا فوری ہنگامی اجلاس طلب کیا جائے جس میں مسلم ممالک کو درپیش مسائل کے حل اور روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کے خلاف مستحکم لائحہ عمل وضع کیا جائے،اسلامی کانفرنس ویٹو کا حق حاصل کرے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو عالمگیر ہفتہ ولایت کے آغاز پر محفل عید غدیر سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

آقائی موسوی نے باورکرایا کہ پاکستان نے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے پون لاکھ کے قریب جانوں کے نذرانے پیش کیے،اربوں کھربوں کا جان نقصان برداشت کیا ۔انہوں نے کہا کہ اگرنیشنل ایکشن پلان کی ہر شق پر عملدرآمدکیا جاتا توامریکہ کے بڑوں کو بھی پاکستان سے ڈو مورکے مطالبے کی جرات نہ ہوتی۔انہوں نے حکومت پر زوردیا کہ وہ قوم و ملک کی عزت و حرمت کے عروج اور وطن عزیز کی بقاء و سلامتی کیلئے دہشتگرد کالعدم گروپوں کے محض کھالیں جمع کرنے پر پابندی لگانے تک محدود نہ رہے بلکہ انہیں آہنی شکنجے میں جکڑے۔

قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی نے کہا کہ68ء میں مسجد اقصیٰ کی آتشزدگی کے بعد57ممالک پر مشتمل عالم اسلام کی واحد نمائندہ تنظیم او آئی سی کو وجود میں لایا گیا جس نے نائن الیون سے لے کر تا ہنوز مسلمانوں کا کوئی مسئلہ حل نہیں کیا۔انہوں نے اس امر پر افسوس کا اظہارکیا کہ مسلم ممالک میں مداخلت کرکے ظلم کا بازار گرم کیا گیا،افغانستان کو تہس نہس کردیا گیا،عراق کی اینٹ سے اینٹ بجا دی گئی،شام کو کھنڈرات میں تبدیل کیا گیامگربیشتر مسلم حکمران مداخلت اور مظالم کی پالیسی پر عمل پیرا ہیں ،روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام اور نسل کشی کی جارہی ہے لیکن کسی مسئلے پر او آئی سی نے رسمی اجلاس طلب کرنے کی زحمت گوارہ نہیں کی۔انہوں نے کہا کہ اس وقت دشمن عالم اسلا م کوتقسیم کرو اور حکومت کرو کے ایجنڈے پر پوری قوت کیساتھ عمل پیرا ہے،عالم انسانیت کے ملجا و ماویٰ حجاز شریف میں سعودی فرمانرواؤں نے شیطان اعظم کی صدارت میں ریاض کانفرنس کے ذریعے بعض مسلم ممالک کو دہشتگرد ی کا گڑھ قراردیکر خوشی کے شادیانے بجائے ،اب ٹرمپ نے نئی افغان پالیسی دے کر پاکستان پر مزید دباؤ بڑھانے کیلئے ڈو مورکے مطالبے میں شدت پیدا کی ہے اورپاکستان کو رویہ بدلنے کی دھمکی بھی دے ڈالی ہے جس کا مقصد مشرق وسطیٰ میں یہود اور جنوبی ایشیاء میں ہنود کو تھانیدار بنانا ہے ،اس مقصد کیلئے استعماری سرغنہ مکمل سرپرستی اور انہیں جدید اسلحے سے لیس کررہا ہے۔

آقای موسوی نے کہا کہ عید غدیر اعلان ولایت علی ؑ کی یادگارہے جسکی بدولت دین مکمل اور نعمتیں تمام ہوئیں۔امیر المومنین مولا علی المرتضیٰ ؑ کا فرمان ہے کہ علی ؑ ظلم و جور سے مدد طلب کرسکتا ہے ؟ایسا ہر گز نہیں ۔انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ مسائل کے حل کیلئے غیروں پر انحصار کرنے کے بجائے اپنے قدرتی وسائل اور ایمانی قوت کو بروئے کار لائے ،اس طرح بڑے سے بڑے ’’ابرہہ‘‘ کو نیست و نابود کیا جاسکتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3721

Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3721