یوم باقر العلوم مذہبی جذبے اور عقیدت و احترام کیساتھ منایا گیا 

ولایت نیوز شیئر کریں

راولپنڈی( ولایت نیوز)قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کے اعلان کے مطابق پانچویں تاجدار امامت حضرت امام محمد باقر علیہ السلام کا یوم شہادت بدھ کو راولپنڈی ریجن میں بھی مذہبی جذبے اور عقیدت و احترام کیساتھ منایا گیا۔اس موقع پر امام بارگاہوں میں مجالس عزا ہوئیں جن کے اختتام پر شبیہ تابوت باقر العلوم بر آمد کئے گئے ۔

ہیئت طلبائے اسلامیہ کے زیر اہتمام علی ہال میں مجلس باقر العلو م سے خطاب کرتے ہوئے مفتی باسم عباس زاھری نے کہا کہ پانچویں جانشین رسول ؐ حضرت امام محمد باقر علیہ السلا م کی تعلیمات پر عمل کرکے نہ صرف معاشرے کی اصلاح کو یقینی بنایا جاسکتا ہے بلکہ انسانیت کو درپیش گونا گوں مسائل و مصائب ،مشکلات اور حوادثات و سانحات سے چھٹکارا حاصل کیا جاسکتا ہے۔

انہوں نے باورکرایا کہ اس وقت عالمی سرغنے اور اسکے ایجنٹوں نے مظلوم اقوام اور عالم اسلام کا جینا دوبھر کررکھا ہے جو تمام مسلم ممالک کو نشانہ بنانا چاہتاہے۔انہوں نے کہا کہ خاصان خدا میں سے ایک عظیم ترین ہستی حضرت امام محمد باقرؑ ہیں ۔علامہ سیدقارحسین قمی نے کہا کہ امام باقرؑ کو کثرت علم کی وجہ سے باقر العلوم کہا جاتا تھا ۔

دربار عالیہ سخی شاہ پیارا کاظمی المشہدی چوہڑ ہڑپال میں علامہ مطلوب حسین تقی نے مجلس شہادت سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حضرت امام باقر علیہ السلام کا سینہ علوم کا خزینہ تھا،زمانے نے تھوڑی سی مہلت دی تو درس و تدریس کے بے پایاں سلسلے کا آغاز ہوا، ہزاروں افراد اس چشمہ علم و حکمت سے سیراب ہوئے۔امام زہری ،امام عوزاعی ،امام مالک اورا مام ابوحنیفہ جیسے بزرگ آپ ہی کی درس گاہ کے خوشہ چینوں میں سے تھے۔آپ ؑ کی خداداد قابلیت کا اپنے پرائے سبھی اعتراف کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حضرت امام محمد باقر علیہ السلام نے معارف و حقائق کے وہ دریا بہائے جن سے سوائے دیوانے اور اندھے کے کوئی انکار نہیں کرسکتا۔انہوں نے کہا کہ باقر العلوم نے فرمایا کہ سب سے بڑی نیکی دوستوں کے ساتھ نیکی کرنا اور سب سے بڑی مہربانی بھائیوں کے ساتھ مہربانی کرنا ہے۔انہوں نے واضح کیا کہ اگر ہم تمام مشکلات سے نجات چاہتے ہیں تو عالمی سرغنے اور اس کے اتحادیوں سے چھٹکارا حاصل کرنا ہوگا اور الہی نمائندوں کی پیروی کرتے ہوئے استعمارکے بجائے ذاتِ پروردگار کی بارگاہ میں سجدہ ریز ہونا ہوگا ،اسی میں ہماری نجات اور کامیابی و سرفرازی کا رازمضمر ہے۔

انجمن کنیزان امام العصروالزمان کے زیراہتمام شعب ابیطالب ؑ میں مجلس عزاسے خطاب کرتے ہوئے آپاسیدہ حسین نے کہاکہ حضرت امام محمد باقر ؑ نے علوم و معارف کے اتنے رموز و اسرار کو آشکارہ کیا اور احکام و علوم کے ایسے حقائق بیان فرمائے کہ بصیرت کے اندھوں کے سوا کوئی ان کا انکار نہیں کر سکتا ۔لواء زینب کاظمی نے کہا کہ امام محمد باقرؑ علوم و معارف کو کلام الہیٰ سے بطور الہام حاصل کرتے اور نورانی آیات قرآنی سے مدد لیتے آپ ؑ علمی و دینی خدمت کی پاداش میں درجہ شہادت پر فائز ہوئے، امام باقر ؑ کی قبر اطہر جنت البقیع میں اپنی دادی زہراؑ کے پہلو میں واقع آج بھی مرجع خلائق ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3728

Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3728