ملک بھر میں ’’یوم ابوذر ‘‘ منایا گیا، مجالس عزا کا انعقاد

ولایت نیوز شیئر کریں

اسلام آباد( ولایت نیوز)قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کے اعلان کے مطابق رسول خدا ؐ کے مقتدر صحابی رسولؐ حضرت ابوذر غفاریؓ کا یوم وصال ملک بھر میں ’’یوم ابوذر ‘‘ کے طور پر منایا گیا۔اس موقع پر تمام شہروں میں مختلف تنظیموں کی جانب سے مساجد امام بارگاہوں اولیاء کی درگاہوں میں مجالس عزا کا انعقاد کیا گیا سیمینار منعقد کئے گئے جن میں حضرت ابوذر غفاریؓ کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

7،6ذوالحجہ (منگل ، بدھ کو حضرت امام باقر علیہ السلام کی شہادت کی مناسبت سے ایام باقر العلوم کے پروگرام منعقدہوں گے۔

تحریک نفاذفقہ جعفریہ پاکستان کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات الحاج علامہ سیدقمرحیدرزیدی نے المرتضیٰ ہال میں مجلس ابوذر سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عالم اسلام اور پاکستان کے وسائل کو چند طبقات اور خاندان بیدردی سے لوٹ رہے ہیں جنہیں ناکام کرنے کیلئے سیرت ابوذر کو اپنانا ہوگا ،دہشت گردوں کے خلاف فیصلہ کن مہم میں پوری قوم افواج پاکستان کے ساتھ ہے۔ انہوں نے کہاکہ عظیم صحابی حضرت ابوذر کو رسول خداؐ نے اہل بہشت میں سے قرار دیتے ہوئے فرمایاکہ آسمان نے سایہ نہیں کیا اور زمین نے اپنی پشت پر ایسے انسان کو نہیں اٹھایا جو ابوذرؒ سے زیادہ سچا ہو ،حضرت ابوذرؓ نے سرمایہ داری کے خلاف آواز بلند کرتے ہوئے راہ حق و صداقت میں ہر قسم کی تکالیف اٹھا کر فرمان رسالت ؐ کو سچ کر دکھایا ۔جب ابوذرؓ رسول خدا کے سامنے حاضر ہوئے اور عرض کی کہ میرے سامنے اسلام پیش کریں تو رسول اللہ نے فرمایا اللہ کی وحدانیت اور محمد ؐ کی نبوت کی گواہی دوگندی باتوں برائیوں سے اجتناب کرواچھے اخلاق اختیار کروبتوں کی پرستش سے گریز کرو اللہ جس کا کوئی شریک نہیں اس کی عبادت کرو فضول خرچی سے بچواور ظلم سے بازآؤ۔

انہوں نے کہا کہ آج دنیا کو سرمایہ داری نظام کی ظلم و بربریت کا سامنا ہے پسماندہ ممالک اور مسلم ریاستوں کو ایک ایک کرکے ڈسا جارہا ہے بھائی کا گلا بھائی سے کٹوایا جارہا ہے مسلم حکمران استعمار کیلئے استعمال ہورہے ہیں مسلم ممالک ایک دوسرے کی ریاستوں میں مداخلت کررہے ہیں اس گھر کو گھر کے چراغوں سے آگ لگوائی جا رہی ہے ۔سیدقمرزیدی نے کہا کہ دین میں جبر نہیں اپنا عقیدہ بیان تو کیا جا سکتا ہے لیکن دوسرے پر مسلط کرنا فساد کی جڑ ہے آج ہمارے حکمرانوں کی نالائقیوں اور غلط اقدامات کی وجہ سے یہودوہنود مسلم امہ کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حضرت ابوذرسرمایہ دارانہ نظام کے سخت خلاف تھے ، حضرت ابوذرؓ نے غلط راہ اختیار کرنے والے طبقات پر کڑی تنقید کی ،ناداروں اور مظلوموں پر ظلم و تشدد کیخلاف آواز اٹھانے کو شعار بنا یا ،آپ اس قول خداوندی کو دہراتے کہ جولو مال جمع کرتے اور اسے راہ خدا میں خرچ نہیں کرتے ان کیلئے ذلت آمیز عذاب ہے،اسی پاداش میں حضرت ابوذر کو جلاوطن ہونا پڑا غربت کی موت قبول کی لیکن انہوں نے اللہ و رسول ؐ کے فرامین پر سمجھوتہ نہ کیاآج بھی اسلام اور پاکستان کی سرخروئی اور نجات سیرت ابوذر اپنانے میں ہی مضمر ہے ۔

ہیڈ کوارٹر مکتب تشیع میں موصولہ اطلاعات کیمطابق جڑواں شہروں رالپنڈی اسلام آباد سمیت لاہور ، کراچی ، کوئٹہ ، پشاور، حیدر آباد ، سکھر ، لاڑکانہ، ملتان ، بہاولپور، سرگودھا، فیصل آباد ، سیالکوٹ، گوجرانولہ ، گجرات، چکوال، ڈیرہ اسماعیل خان ، کوہاٹ ، مردان، نوشہرہ سمیت تمام شہروں میں یوم ابوذر کے پروگراموں کا انعقاد کر کے صحابی رسولؐ حضرت ابوذر غفاری کی سیرت و کردار کو اُجاگر کیا گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3728

Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3728