کریمہ اہلبیتؑ حضرت فاطمہ معصومہ قم ؑ کا جشن میلاد عقیدت و احترام سے منایا گیا

ولایت نیوز شیئر کریں

حضرت خدیجہ ؑ شریکہ کارِ رسالت، فاطمہ زہرا ؑ شریکہ ولایت و امامت ، حضرت زینب بنتِ علی ؑ شریکۃ الحسین ؑ  اور حضرت فاطمہ معصومہ ؑشریکہ علی ؑ بن موسیٰ الرضا ؑ ہیں

راولپنڈی(ولایت نیوز ) کریمہ اہلبیتؑ حضرت فاطمہ معصومہ قم سلام اللہ علیہا کی ولادت پر نور کی مناسبت سے مولاناملک اجلال حیدرالحیدری ، تفضل عباس زوار، جشن کریمہ اہلبیت کمیٹی کے زیراہتمام امام بارگاہ زین العابدین سٹیلائٹ ٹاؤن میں جشن کاانعقادکیاگیا۔ جس میں مقررین نے خانوادہ مخدرات عصمت و طہارت کی سیرت وکردار پر روشنی ڈالی۔ جشن سے خطاب کرتے ہوئے علامہ سید قمرحیدرزیدی نے کہا کہ حضرت معصومہ قم حضرت فاطمہ ؑ بنتِ موسیٰ کاظم ؑ عظمتِ نسواں کا عظیم نشان ہیں۔ انہوں نے کہاکہ خانوادہ رسالت کی عصمت مآب خواتین کی سیرت طبقہ نسواں کیلئے مکمل نمونہ ہے جسکی عملی پیروی کرکے خواتین معاشرے میں آبرومندانہ مقام حاصل کرسکتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ خانوادہِ محمد و آل محمد علیہم السلام نے انسانیت کو چار چاند لگادیئے ۔انہوں نے واضح کیا کہ حضور نبی کریم ؐ اور آپ ؐ کے پاکیزہ جانشین اور صحابہ کبارؓ ہی نہیں بلکہ اس گھرانے کی مخدراتِ عصمت و طہارت بھی عالم بشریت کیلئے آئیڈیل ہیں،خانوادہِ رسالت کی عظیم ہستی حضرت معصومہ قم کی شرافت و کرامت کے اپنے تو کجا غیر بھی معترف ہیں ۔سید قمر زیدی نے کہا کہ یہ شرف پورے عالم میں خاصانِ الہی اور بالخصوص آل محمد علیہم السلام کو حاصل رہا ہے کہ وہ نہ کبھی جھکے اور نہ ہی کسی موڑ پر ان کے قدم ڈگمگائے ،یہی وجہ ہے کہ دنیا کے بڑے سے بڑے آمر و ڈکٹیٹر انہیں زیر نہ کرسکے۔ انہوں نے کہاکہ حضرت فاطمہ معصومہ سلام اللہ علیہا مخدراتِ عصمت و طہارت کے خانوادہ کی وہ عظیم ہستی ہیں جن کی شرافت و کرامت کے اپنے تو کجا غیر بھی معترف ہیں۔ انہوں نے کہاکہ حضرت معصومہ قم سلام اللہ علیہا فضل و کمال،زہد و تقویٰ کی معراج اور علم کی عظیم ترین منزل پر فائز تھیں،آپ کو چارذواتِ مقدسہ نے معصومہ کے لقب سے ملقب فرمایا ۔آپ ؑ وارثِ چادر زہرا ؑ و ثانی زہرا تھیں ۔انہوں نے کہا کہ حضرت امام علی رضا علیہ السلام کا فرمان ہے کہ جس نے معصومہ قم کی زیارت کی اُس نے میری زیارت کی ،آپ ؑ فضل و کمال ،زہد و تقویٰ کی معراج اور علم کی عظیم ترین منزل پر فائز تھیں ،خواتین محلہ بنی ہاشم کثرت تعداد میں آپ ؑ کے درس میں شرکت کرتیں اس لئے آپ کو محدثہ بھی کہا جاتا ہے ۔علامہ ابوالحسن تقی نے کہاکہ حضر ت فاطمہ بنتِ امام موسیٰ کاظم ؑ نے دین و شریعت کی اشاعت ، خوشنود ی ذاتِ الہی اورفلاحِ انسانیت و بشریت کیلئے ہر طرح کے مصائب و آلام برداشت کرکے دنیائے نسوانیت کو مقام عظیم عطا کیا ۔انہوں نے کہا کہ خانوادہ رسالت کو یہ عز و شرف حاصل ہے کہ جہاں اس کے مردوں نے عظیم کام کیے وہاں اس گھرانے کی مخدراتِ عصمت و طہار ت نے ان کا ساتھ نبھایا۔حضرت خدیجہ ؑ شریکہ کارِ رسالت ہیں تو حضرت فاطمہ زہرا ؑ شریکہ ولایت و امامت ہیں جبکہ حضرت زینب بنتِ علی ؑ شریکۃ الحسین ؑ ہیں اور حضرت فاطمہ بنتِ موسیٰ کاظم ؑ شریکہ علی ؑ بن موسیٰ الرضا ؑ ہیں جنہیں معصومہ قم کے لقب سے یاد کیا جاتا ہے‘آپ ؑ نے رشدو ہدایت کے چراغ روشن کیے۔انہوں نے کہا کہ حضرت معصومہ قم کا روضہ آج بھی دنیائے حوزاۃ میں اعلیٰ مقام رکھتا ہے اور حرم اقدس مرجع خلائق ہے۔ جشن سے شاعراہلبیت سائل رضا، مولانا علی باصرصادقی ، مولاناساجد محمودعدنی ،سیدمحمدعباس کاظمی ، ننھاذاکرواصف علی مشہدی ، ننھاذاکرذکی جابر، قاضی وفاعباس،ذاکرحیدرعلی چوہدری نے بھی خطاب کیا ۔اس موقع ایک قرارداد کے ذریعے افواج پاکستان کو زبردست خراجِ تحسین پیش کیا جنہوں نے آپریشن ضرب عضب کے ذریعے دہشتگروں کے بخیے ادھیڑ کر رکھ دےئے ہیں جسے دشمن سبوتاژ کرنے ، پاک چین اقتصادی راہداری کے معاہدوں کو ناکام کرنے کیلئے پورا زور صرف کر رہا ہے۔قرارداد میں قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کی قیادت پر غیر متزلزل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے مشن ولا و عزا کے فروغ ‘دینی حقوق کے حصول اور وطن عزیز پاکستان کی سلامتی و استحکام کیلئے ان کے حکم پر ہر قسم کی قربانی پیش کرنے کے عہد کا اظہار بھی کیا گیا۔اختتام جشن پرمولاناملک اجلال حیدرالحیدری القمی نے شرکاء کاشکریہ اداکیا۔

جشن میلاد معصومہ قم ؑ
جشن میلاد معصومہ قم ؑ
جشن میلاد معصومہ قم ؑ
جشن میلاد معصومہ قم ؑ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3721

Notice: ob_end_flush(): failed to send buffer of zlib output compression (1) in D:\hshome\automotonk\walayat.net\wp-includes\functions.php on line 3721